فضائی حملوں میں حوثیوں اور صالح ملیشیا کی ہلاکتیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کی قیادت میں اتحاد کے لڑاکا طیاروں کے یمن میں ایک فضائی حملے میں حوثی ملیشیا اور معزول صدر علی عبداللہ صالح کی وفادار ملیشیا کے متعدد سینیر ارکان ہلاک ہوگئے ہیں۔

العربیہ نیوز چینل کی رپورٹ کے مطابق اتحادی طیاروں نے دارالحکومت صنعا سے شمال میں واقع صوبے عمران میں حوثیوں اور صالح ملیشیا کے ارکان کے ایک اجتماع کو فضائی حملے میں نشانہ بنایا ہے۔

اتحادی طیاروں نے صوبہ شبوۃ کے شہر عتق میں واقع ایک فوجی ہوائی اڈے پر بھی بمباری کی ہے۔قبل ازیں جمعرات کو فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی نے عینی شاہدین کے حوالے سے یہ اطلاع دی تھی کہ سعودی عرب کی قیادت میں اتحادی ممالک کے لڑاکا طیاروں نے صنعا میں وزارت دفاع اور فوج کے زیر استعمال عمارتوں پر فضائی حملے کیے تھے۔

صنعا کے وسط میں واقع ایک عمارت پر حملے کے بعد تین دھماکوں کی آوازیں سنی گئی تھیں اور علاقے میں ہر طرف دھواں پھیل گیا۔صنعا میں سابق صدر علی عبداللہ صالح کی وفادار ری پبلکن گارڈ فورس کے ٹھکانوں کو بھی نشانہ بنایا گیا ہے۔

واضح رہے کہ ری پبلکن گارڈ کے افسر اور اہلکار علی عبداللہ صالح کی سنہ 2012ء میں معزولی کے باوجود انہی کے ساتھ وفاداری نبھاتے چلے آرہے ہیں اور حوثی باغیوں کے ساتھ گٹھ جوڑ کر ملک کے منتخب صدر عبد ربہ منصور ہادی کی حکومت کے تحت سرکاری فوج کے خلاف جنگ میں شریک ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں