عدن میں ایرانی پاسداران انقلاب کا عہدیدار گرفتار

یمن جنگ میں عدم مداخلت کا ایرانی دعویٰ غلط ثابت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

یمن میں جاری لڑائی میں ایران کی جانب سے عدم مداخلت کے دعوئوں کے باوجود جنوبی یمن میں ایرانی پاسدارن انقلاب کے ایک اہم عہدیدار کی گرفتاری کی اطلاعات ہیں۔

یمن کے سماجی کارکنوں نے انٹرنیٹ پر مبینہ طور پر پاسداران انقلاب کے ایک عہدیدار کی تصویر پوسٹ کی ہے جس کے بارے میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ اسے جنوبی یمن میں حوثیوں کے ساتھ لڑتے ہوئے گرفتار کیا گیا ہے۔

’’ھنا‘‘نامی ایک نیوز ویب سائٹ پر پوسٹ کی گئی ایک باریش شخص کی تصویر میں دکھائے شخص کے بارےمیں بتایا گیا ہے کہ اسے عدن میں المعلا سے حراست میں لیا گیا۔

تاہم یمن میں سرکاری سطح پر اس خبر کی تصدیق یا تردید نہیں کی گئی ہے۔ اگر یہ خبر درست ہے تو یہ یمن میں پاسداران انقلاب کی موجودگی کا ثبوت ہے اور اپنی نوعیت کی پہلی گرفتاری ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں