.

عرب اتحادی طیاروں کی صنعاء، شبوہ اور مارب میں بمباری

فضائی حملوں کا نشانہ صالح اور حوثی ملیشیا کے مراکز تھے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی قیادت میں فیصلہ کن طوفان آپریشن کے لڑاکا طیاروں نے یمن کے دارلحکومت صنعاء میں سابق صدر علی عبداللہ صالح اور حوثی ملیشیا کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا۔ لڑاکا طیاروں کا خصوصی ہدف ارحب گورنری میں باغیوں کے مراکز بیان کئے جاتے ہیں۔

عرب اتحاد میں شامل لڑاکا طیاروں کی جانب سے متذکرہ علاقوں میں گولا بارود کے ڈپو، گاڑیوں اور میزائلوں کو نشانہ بنایا گیا۔ فیصلہ کن طوفان آپریشن کے طیاروں نے شبوہ گورنری پر پیر کے روز دس فضائی حملے کئے جن میں صالح اور حوثی ملیشیا کے زیر استعمال فوجی ہوائی اڈا، شبوہ کے علاقے عتق میں 21 بریگیڈ کا ہیڈکوارٹرز خصوصی نشانہ بنے۔

ادھر باغیوں کے خلاف سرگرم عوامی مزاحمت کمیٹیوں نے مارب صوبے کی صرواح ڈائریکٹوریٹ میں حوثی ملیشیا کے خلاف ہونے والی چھڑپوں میں مٶخر الذکر شدید نقصان پہنچایا۔ عوامی مزاحمتی کمیٹیوں نے صالح ملیشیا کی جانب سے کئے جانے والے حملے کو ناکام بنا دیا۔