.

یمن : مسلح قبائلیوں نے 15 حوثیوں کو یرغمال بنا لیا

شبوہ کے شہر عتق سے حوثی ملیشیا کو بے دخل کرنے کی تیاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے دو جنوبی صوبوں شبوہ اور ابین میں مسلح قبائلیوں نے پندرہ حوثی شیعہ باغیوں کو یرغمال بنا لیا ہے۔

العربیہ نیوز چینل کی رپورٹ کے مطابق شبوہ میں قبائل کے اتحاد کے کمانڈر نے کہا ہے کہ مرکزی شہر عتق سے حوثی ملیشیا کو بے دخل کرنے کی تیاری کی جارہی ہے۔اس کمانڈر کا کہنا ہے کہ معزول صدر علی عبداللہ صالح کی وفادار فورسز نے حوثیوں کی شہر میں داخلے میں مدد کی تھی۔

درایں اثناء یمن کے تیسرے بڑے شہر تعز میں صدر عبد ربہ منصور ہادی کے وفادار مقامی قبائل پر مشتمل عوامی مزاحمتی کمیٹیوں نے دو حملوں میں متعدد حوثیوں کو ہلاک کردیا ہے۔

یمن کے جنوبی شہروں میں حوثی ملیشیا اور صدر منصور ہادی کی وفادار فورسز کے درمیان گذشتہ کئی روز سے خونریز جھڑپیں ہورہی ہیں اور حوثیوں کی سعودی عرب کے ساتھ واقع سرحد پر سعودی فورسز کے ساتھ جھڑپیں ہوئی ہیں جن کے نتیجے میں ہفتے کے روز تک پانچ سو سے زیادہ حوثی جنگجو ہلاک ہوچکے تھے۔

حوثیوں کے سرحد پار سعودی سکیورٹی فورسز پر حملوں کے بعد اب خلیج عرب اتحاد کے گن شپ ہیلی کاپٹر بھی فضا میں پروازیں کررہے ہیں اور سعودی عرب نے اپنی جنوب مغربی سرحد پر گذشتہ ہفتے ٹینک ،توپ خانے اور بکتر گاڑیوں کو لگا دیا تھا۔سعودی عرب کی قیادت میں اتحادی ممالک کے لڑاکا طیارے 26 مارچ سے یمن میں حوثی شیعہ باغیوں اور ان کے اتحادی شورش پسندوں کے خلاف فضائی حملے کررہے ہیں۔