علی صالح خلیجی ممالک سے پناہ کی بھیک مانگنے لگے!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن کے سابق صدر علی عبداللہ صالح پر اپنے ملک کی زمین اب تنگ ہوچکی ہے اور وہ خلیجی ممالک سے اپنی اور پورے خاندان کے لیے امن کی بھیک مانگنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔

ایک خلیجی ملک کے سرکردہ عہدیدار نے’’العربیہ‘‘ نیوز چینل کو بتایا کہ حال ہی میں علی عبداللہ صالح نے اپنا ایک ایلچی خلیجی ملکوں میں بھیجا ہے جس کے توسط سے انہوں نے اپنے اور پورے خاندان کے یمن سے بہ حفاظت باہر نکالنے کی درخواست کی ہے۔

خلیجی ذرائع کا کہنا ہے کہ علی صالح کے خصوصی ایلچی نے متعدد خلیجی ملکوں کا دورہ کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق خلیجی ملکوں کی جانب سے علی صالح کے ایلچی ابوبکر القربی کے مشن کو ناممکن قرار دیتے ہوئے سابق صدر کا حوثیوں سے اتحاد اور پھر ان سے علاحدگی کے اعلان کو ان کے سیاسی اور اخلاقی افلاس کا ثبوت قرار دیا ہے۔ خلیجی ممالک نے علی صالح کے ایلچی کو صاف جواب دیا ہے کہ فی الحال وہ ایسی کسی درخواست پرغور نہیں کرسکتے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں