.

یمن: 15 ہزار فوجیوں کا ہادی حکومت سے اظہارِ وفاداری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے سعودی عرب کے ساتھ واقع صحرائی اور پہاڑی علاقے میں تعینات سرکاری فوج کے کمانڈروں نے جلا وطن صدر عبد ربہ منصور ہادی کی حکومت کے ساتھ وفاداری کا اظہار کردیا ہے۔

یمنی حکام کے مطابق فرسٹ ملٹری ڈسٹرکٹ سے تعلق رکھنے والے بریگیڈئیر جنرل عبدالرحمان الحلیلی نے اتوار کو صدر منصور ہادی کی آئینی حکومت کی حمایت کا اعلان کیا ہے۔اس ملٹری ڈسٹرکٹ کا بیس وادی حضر موت کے مرکزی شہر سیون میں واقع ہے۔اس شہر میں سرکاری ریڈیو سے جنرل الحلیلی کا اعلان نشر کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ یمن کی فوج کا بڑا حصہ معزول صدر علی عبداللہ صالح کا وفادار ہے۔ان فوجیوں کے علاوہ علی صالح کی اتحادی دوسری ملیشیائیں شیعہ حوثی باغیوں کے ساتھ مل کر ملک کے جنوب اور جنوب مشرقی علاقوں میں سرکاری فوج کے خلاف لڑرہے ہیں۔یمنی فوج کے بہت سے یونٹ گذشتہ سال ستمبر میں حوثیوں کے یمن کے دارالحکومت صنعا پر قبضے کے بعد ان کے ساتھ مل گئے تھے اور وہ ہادی حکومت کی حمایت سے منحرف ہوگئے تھے۔

اب فوج کے ان دستوں کے صدر منصور ہادی سے اظہار وفاداری کے اعلان کے بعد ان کی حمایت کرنے والے ڈویژنوں کی تعداد دس ہوگئی ہے۔واضح رہے کہ سعودی عرب کی قیادت میں اتحاد کے گذشتہ تین ہفتوں سے حوثی شیعہ باغیوں کے خلاف فضائی حملوں کے بعد اب فوجی یونٹوں کے کمانڈر علی الاعلان ہادی حکومت کی حمایت کا اظہار کرنے لگے ہیں جبکہ ان کے حامی قبائل بھی ملک کے جنوبی اور جنوب مشرقی علاقوں میں حوثی باغیوں کی سخت مزاحمت کررہے ہیں۔