سعودی نیشنل گارڈ کو حوثی مخالف آپریشن میں شرکت کا حکم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے مملکت کی نیشنل گارڈ کو یمن میں حوثی شیعہ باغیوں کے خلاف کارروائی میں حصہ لینے کا حکم دیا ہے۔

سعودی نیشنل گارڈ کے وزیر شہزادہ متعب بن عبداللہ نے منگل کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ان کے تحت فورسز بالکل چوکس ہیں اور وہ آپریشن فیصلہ کن طوفان میں حصہ لینے کے لیے بالکل تیار ہیں۔

العربیہ نیوز چینل کی رپورٹ کے مطابق شہزادہ متعب نے کہا ہے کہ نیشنل گارڈ فوج کے دوسرے شعبوں سے تعلق رکھنے والے اپنے بھائیوں اور ساتھیوں کے شانہ بشانہ لڑنے کے لیے تیار ہے۔

سعودی عرب کی قیادت میں دس ملکی فوجی اتحاد کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل احمد العسیری نے گذشتہ ہفتے کہا تھا کہ زمینی افواج کو ضرورت پڑنے کی صورت ہی میں یمن میں تعینات کیا جائے گا۔انھوں نے سعودی بری فوج کی یمن میں فوری تعیناتی کے امکان کو مسترد کردیا تھا۔

سعودی عرب اور اس کے اتحادی ممالک کے لڑاکا طیارے 26 مارچ سے یمن میں حوثی شیعہ باغیوں ،سابق صدر علی عبداللہ صالح کے وفادار فوجی یونٹوں اور ان کی اتحادی ملیشیاؤں کے ٹھکانوں پر فضائی حملے کررہے ہیں۔البتہ سعودی عرب اور یمن کے درمیان سرحد پر حوثی جنگجوؤں اور سعودی سکیورٹی فورسز کے درمیان آئے دن جھڑپوں کی اطلاعات سامنے آتی رہتی ہیں اور سرحد پار سے حوثی باغی سعودی فورسز پر گولہ باری اور فائرنگ کرتے رہتے ہیں جس کے نتیجے میں اب تک متعدد سعودی فوجی شہید ہوچکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں