.

امریکی مفاہمت، اسرائیل کو جدید ترین جنگی طیاروں کا وعدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی نائب صدر جو بائیڈن نے امریکا اور اسرائیل کے درمیان موجود کشیدگی کو کم کرنے کے لئے اسرائیل کو اگلے سال جدید ترین جنگی طیارے فراہم کرنے کا وعدہ کیا ہے تاکہ اسرائیل کی خطے میں فوجی برتری قائم رہے۔ اس موقع پر بائیڈن نے ایران کے ساتھ حتمی جوہری معاہدے میں اسرائیل کی حفاظت کو بھی مدنظر رکھنے کا عہد کیا۔

واشنگٹن میں اسرائیل کے یوم آزادی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے بائیڈن کا کہنا تھا کہ براک اوباما اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو کے ساتھ ایران سے جوہری مذاکرات اور مشرق وسطیٰ میں سفارت کی پالیسیوں پر کشیدگی کے باوجود اسرائیل کے پکے حامی ہیں۔

بائیڈن کی جانب سے اسرائیل کو لاک ہیڈ مارٹن کمپنی کے نئے ایف 35 جیٹ طیارے کے اعلان کے موقع پر تقریب کے حاضرین نے انہیں بھرپور داد دی۔ امریکا کی جانب سے یہ طیارے حاصل کرنے کے بعد اسرائیل مشرق وسطیٰ کا واحد ملک ہوگا جس کے پاس ریڈار پر پوشیدہ رہنے والا جدید ترین طیارہ ہوگا۔

مگر تقریب میں موجود حاضرین نے اس وقت مکمل خاموشی اختیار کرلی جب بائیڈن نے ایک بار پھر امریکا کی جانب سے مسئلہ فلسطین میں دو ریاستی حل کی حمایت کا اظہار کیا۔

امریکا اور اسرائیل کے درمیان تعلقات میں اس وقت کشیدگی آگئی تھی جب نیتن یاہو نے ریپبلکن سینیٹرز کی جانب سے امریکی کانگریس میں خطاب کرنے کی دعوت قبول کی تاکہ وہ ایران کے ساتھ عالمی طاقتوں کے جوہری معاہدے کے بارے میں اسرائیل کا نقطہ نظر پیش کرسکیں۔ نیتن یاہو نے تقریر کے دوران امریکی صدر کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔ اسکے بعد نیتن یاہو نے ایران کے ساتھ ہونے والے فریم ورک معاہدے پر تنقید کرتے ہوئے اسے اسرائیل کی سلامتی کو خطرہ قرار دیا تھا۔

بائیڈن نے تقریب میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اوباما ایران کے ساتھ کسی حتمی معاہدے میں اسرائیل کی سلامتی کو یقینی بنائیں گے۔

بائیڈن کا کہنا تھا کہ اگر کوئی بھی حتمی معاہدہ اوباما کے مطالبات کے مطابق نہیں ہوگا تو ہم اس پر کسی صورت دستخط نہیں کریں گے۔

بائیڈن نے خبردار کیا کہ "اگر ایران نے کسی بھی وقت دغا کیا اور اس نے جوہری ہتھیار بنایا تو قابل استعمال آپشن موجود ہے اور آپ کی [اسرائیلی] فوج آپ کو تسلی کروا دے گی۔"

مشرق وسطیٰ میں اسرائیل کی فوجی برتری کو یقینی بنانے کی امریکی کوششوں کا ایادہ کرتے ہوئے بائیڈن نے بتایا کہ اگلے سال امریکا اسرائیل کو جدید ترین ایف 35 طیارے فراہم کرے گا۔

اسرائیل نے 2010ء میں 19 ایف 35 جنگی جہاز 2٫75 ارب ڈالر کے عوض خریدے تھے اور رواں سال فروری میں مزید 14 طیارے خریدنے کا معاہدہ مکمل کیا ہے۔