قطر کی فرانس سے لڑاکا طیاروں کی خریداری کے لیے ڈیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

قطر نے فرانس کے طیارہ ساز اور دفاعی سامان تیار کرنے والے گروپ داسالٹ کے ساتھ اربوں مالیت یورو کا ایک معاہدہ طے کیا ہے۔اس کے تحت قطر فرانس سے چوبیس رافال لڑاکا طیارے خرید کرے گا۔

اس معاہدے پر سوموار کو دوحہ میں داسالٹ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ایرک ٹریپئیر اور قطری جنرل احمد المالکی نے دستخط کیے ہیں۔اس موقع پر فرانسیسی صدر فرانسو اولاند اور امیر قطر شیخ تمیم بن حمد آل ثاںی بھی موجود تھے۔

جنرل احمد المالکی نے چھے ارب تیس کروڑ یورو مالیت کے اس معاہدے کے لیے فرانس کے ساتھ مذاکرات کیے تھے۔دستخطوں کی تقریب میں فرانسیسی صدر نے ان کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ''قطر نے ان لڑاکا طیاروں کو خرید کرنے کے لیے اچھا انتخاب کیا ہے''۔

فرانسو اولاند امیرِقطر سے ملاقات کرنے والے تھے جس کے بعد وہ سعودی عرب روانہ ہوجائیں گے جہاں وہ منگل کے روز خلیج تعاون کونسل کے سربراہ اجلاس میں شرکت کریں گے۔وہ سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبد العزیز سے بھی ملاقات کریں گے اور ان سے یمن میں حوثی شیعہ باغیوں کے خلاف خلیجی عرب ریاستوں کی فضائی مہم سمیت علاقائی اور عالمی صورت حال پر تبادلہ خیال کریں گے۔

فرانس اور قطر کے درمیان رافال طیاروں کی فروخت کے علاوہ ایک اور معاہدہ بھی طے پایا ہے جس کے تحت فرانس چھتیس قطری پائلٹوں اور ایک سو میکنیکل انجنئیروں اور انٹیلی جنس افسروں کو تربیت دے گا۔رافال طیاروں کو جاسوسی کے مشنوں کے لیے بھی استعمال کیا جا سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں