بحرین سے دھماکہ خیزمواد سعودی عرب منتقل کرنے سازش ناکام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے سیکیورٹی حکام نے پڑوسی ملک بحرین سے انتہائی مہلک دھماکہ خیز مواد منتقل کرنے کی ایک خطرناک سازش ناکام بنانے کا دعویٰ کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی وزارت داخلہ کے ترجمان میجر جنرل منصور الترکی نے ریاض میں صحافیوں کو بتایا کہ کسٹمز حکام نے بحرین سے آنے والے سامان کی تلاشی کے دوران مشکوک بیگوں کی چھان بین شروع کی توانہیں ان بیگوں سے RDX نامی ایک نہایت خطرناک دھماکہ خیز مواد ملا ہے۔

یہ دھماکہ خیز مواد ’’فورڈ فیوژن‘‘ کار کے ذریعے شاہ فہد پل کے راستے سعودی عرب اسمگل کرنے کی سازش کی گئی تھی۔ پولیس نے اس سازش میں ملوث تخریب کاروں کو بھی حراست میں لے لیا ہے۔ الترکی نے بتایا کہ سیکیورٹی حکام کو تلاشی کے دوران پلاسٹک کے 14 مشکوک بیگ ملے جنہیں کار کی پچھلی سیٹوں کے نیچے چھپایا گیا تھا۔

ان میں سے 11 تھیلوں میں 30.87 کلو گرام بارودی پائوڈر چھپایا گیا تھا۔ لیبارٹری میں چیک کیے جانے کے بعد پتا چلا کہ یہ RDX نامی نہایت مہلک بارود ہے۔ اس کے علاوہ دوتھیلوں میں دھماکہ خیز پائوڈر کیپسول کی شکل میں رکھا گیا تھا جس کے 50 پیکٹ پکڑے گئے۔ ہر تھیلے میں دھماکے لیے استعمال ہونے والی چھ میٹر ’بتی‘ بھی رکھی گئی تھی۔ حکام نے سازش کے پس پردہ عناصر تک رسائی کے لیے تحقیقات شروع کردی ہیں۔ اس ضمن میں بحرینی حکام کو بھی آگاہ کردیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں