.

"ایران، یمن میں نافذ نیول پابندیاں توڑنا چاہتا ہے"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کی ہلال احمر سوسائٹی کے جنرل سیکرٹری علی اصغر احمدی کا کہنا ہے کہ ان کا ملک بحری راستے سے یمن داخلے کی پابندی توڑنے کا ارادہ رکھتے ہے۔

اس سے پہلے ایران، یمنی فضائی حدود کو اتحادی فوج کی جانب سے 'نو فلائی زون' قرار دیئے جانے کے فیصلے کی خلاف ورزی کی ناکام کوشش کر چکا ہے۔

یاد رہے یمن کی حکومت کی درخواست پر سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحادی میں شامل ملکوں نے یمنی فضائی اور بحری حدود میں بغیر اجازت داخلے کی پابندی عاید کر رکھی ہے۔

اصغر احمدی کے مطابق ایران انسانی بنیادوں پر یمن میں ادویہ، کھانے پینے کی اشیاء اور خیمے بھجوانا چاہتا ہے۔ اتحادی فوج نے یمنیوں کی امداد کی خواہش رکھنے والے افراد، اداروں اور ملکوں سے کہا ہے کہ وہ اس سلسلے میں چند شرائط پر عمل کریں، لیکن ایران ان شرائط پر عمل کے لئے تیار نہیں ہے۔