سابق یمنی صدر کے گھر پر اتحادی طیاروں کی بمباری

شہر میں زوردار دھماکے، دھویں کے بادل آسمان سے باتیں کرنے لگے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی قیادت میں اتحادی فوج کے لڑاکا طیاروں نے اتوار کے روز یمنی دارلحکومت صنعاء کے علاقے حدہ میں معزول صدر علی عبداللہ صالح کے گھر کو ایک مرتبہ پھر نشانہ بنایا ہے۔

علی عبداللہ صالح کے قریبی اہل خانہ اور انکی سیاسی جماعت کے ذرائع نے اتوار کو علی الصباح معزول صدر کے گھر کو اتحادی فوج کی جانب سے نشانہ بنانے کی تصدیق کی ہے۔ مکان پر بمباری کے نتیجے میں تین زوردار دھماکوں کی آوازیں سنی گئیں اور صنعاء کے اس علاقے سے دھویں کے بادل اٹھتے دیکھے گئے جہاں علی عبداللہ صالح کا محل واقع تھا۔

یمنی خبر رساں ایجنسی کا کہنا ہے کہ "گھر پر فضائی حملوں کے بعد علی عبداللہ صالح اور ان کے اہل خانہ محفوظ ہیں۔" علی عبداللہ صالح چند دن قبل نامعلوم مقام پر منتقل ہو گئے تھے جبکہ ان کے گھر والے بھی اپنا اصل مکان چھوڑ کر محفوظ مقام پر منتقل ہو گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں