حوثی باغیوں کی جانب سے دوبارہ جنگ بندی کی خلاف ورزی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی قیادت میں اتحاد نے کہا ہے کہ یمن میں ایران کے حمایت حوثی شیعہ باغیوں نے مسلسل دوسرے روز جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ہے۔اتحاد کا کہنا ہے کہ وہ یمن میں انسانی امداد مہیا کرنے کے لیے جنگ بندی کے وقفے کو کامیاب بنانا چاہتا ہے۔

سعودی عرب کی سرکاری خبررساں ایجنسی ایس پی اے کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ حوثیوں نے دو علاقوں میں جنگ بندی کی خلاف ورزیاں کی ہیں۔حوثیوں نے یمن اور سعودی عرب کے درمیان سرحد پر مسلسل دوسرے روز گولہ باری کی ہے اور پھر خود یمن کے اندر مختلف علاقوں میں کارروائیاں جاری رکھی ہوئی ہیں۔

ایس پی اے کی اطلاع کے مطابق حوثیوں نے سعودی عرب کے سرحدی شہر نجران کے جنوب مغرب میں واقع گاؤں عبدالرضیف میں زمینی افواج پر گولہ باری کی ہے۔اس کی علاوہ ایک سرحدی چوکی ایلب کی جانب بھی گولے پھینکے ہیں۔

حوثیوں نے یمن کے پانچ صوبوں عدن ،ابین ،لحج ،شبوۃ اور مآرب میں اپنی کارروائیاں جاری رکھی ہوئی ہیں اور وہ ان صوبوں میں ٹینکوں اور میزائلوں سے شہریوں کے مکانوں کو نشانہ بنا رہے ہیں۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ سعودی عرب کی قیادت میں اتحاد ہرکسی پر یہ واضح کرنا چاہتا ہے کہ وہ یمنی بھائیوں کے مفاد میں جنگ بندی کے وقفے کو کامیاب بنانا چاہتا ہے۔تاہم سعودی عرب نے حوثیوں اور ان کے حامیوں کو خبردار کیا ہے کہ اگر ان کی جانب سے جنگ بندی کی خلاف ورزیاں جاری رہیں تو زیادہ دیر تک صبر وتحمل سے کام نہیں لیا جائے گا اور حوثیوں کو بھرپور جواب دیا جائے گا۔

سعودی عرب کی قیادت میں اتحاد نے جمعرات کو بھی یمن میں ایران کے حمایت یافتہ حوثی شیعہ باغیوں پر جنگ بندی کی خلاف ورزی کا الزام عاید کیا تھا اور کہا تھا کہ انھوں نے یمن کے اندر جنگ بندی کی پانچ خلاف ورزیاں کی ہیں اور انھوں نے جنوبی شہر الضالع کی جانب توپ خانے اور ٹینک سے گولہ باری کی ہے اور راکٹ بھی چلائے ہیں۔ایک اور جنوبی شہر لودر میں بھی حوثیوں نے بھاری ہتھیاروں سے شدید گولہ باری کی تھی۔جنوبی صوبے عدن میں جنگجو دستوں کی فوجی آلات اور توپ خانے کے ساتھ نقل وحرکت جاری تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں