.

شام: امریکی حملے میں داعشی جنگجو ہلاک، اہلیہ گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی محکمہ دفاع "پینٹاگون" نے دعویٰ کیا ہے کہ امریکی اسپیشل فورسز نے شام کے مشرقی شہر دیرالزور میں‌انٹیلی جنس معلومات کی روشنی میں گن شپ ہیلی کاپٹروں کے ذریعے کارروائی کی ہے جس کے نتیجے میں دولت اسلامی"داعش" کا ابو سیاف نامی اہم کمانڈر ہلاک ہوگیا ہے۔

ادھر امریکی حکام کا کہنا ہے کہ عراقی فورسز کے اشتراک سے شام کی سرحد کے قریب مقتول داعشی کمانڈر ابو سیاف کی اہلیہ کو حراست میں لیا گیا ہے۔ پکڑی گئی خاتون بھی داعش کے لیے جنگجو بھرتی کرنے میں سرگرم پائی گئی ہے۔

امریکی نشریاتی ادارے" سی این این" نے پینٹاگون کے ایک باخبر ذریعے کے حوالے سے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ داعش کے خلاف شام کے شہر دیر الزور میں کارروائی صدر باراک اوباما کہ ہدایت پر انٹیلی جنس معلومات کی روشنی میں کی گئی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ مقتول داعشی کمانڈر ابو سیاف تیل کے ذخائر اور اسے بلیک مارکیٹ میں فروخت سے متعلق امور کی نگرانی کررہا تھا۔ اس کے علاوہ ابو سیاف تنظیم کے دیگر اہم امور کا بھی ذمہ دار تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ گن شپ ہیلی کاپٹروں نے ابو سیاف کے ٹھاکنے پر بمباری کی جس کے نتیجے میں وہ اپنے کئی دوسرے ساتھیوں سمیت مارا گیا۔

ادھر امریکی اور عراقی فورسز نے ایک مشترکہ کارروائی میں مقتول کمانڈر ابو سیاف کی اہلیہ کو بھی حراست میں لیا ہے جو مبینہ طورپر لوگوں کو داعش کے لیے بھرتی کرنے میں ملوث پائی گئی ہے۔

"سی این این" کے مطابق امریکی فوج اور داعش کے درمیان ایک دوسری جھڑپ میں شام میں 10 جنگجو ہلاک ہوگئے ہیں تاہم آپریشن میں امریکی فوج کا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا ہے۔ کارروائی کے بعد امریکی اسپیشل فورس کے اہلکار واپس اپنے اڈے پر پہنچ گئے ہیں۔