.

سعودی اتحادیوں کی یمن میں حوثی باغیوں پر نئی بمباری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی قیادت میں اتحادی ممالک کے لڑاکا طیاروں نے یمن کے جنوبی ،وسطی اور شمالی علاقوں میں حوثی ملیشیا کے ٹھکانوں پر نئے فضائی حملے کیے ہیں۔ان حملوں میں متعدد حوثی جنگجو ہلاک ہوگئے ہیں۔

عینی شاہدین کے مطابق اتحادی طیاروں نے صنعا کے شمال میں واقع صوبے عمران کے علاقے غولہ میں حوثی ملیشیا کے اسلحے کے ڈپوؤں پر بمباری کی ہے۔اتحادی طیاروں نے دارالحکومت صنعا میں حوثی باغیوں کے اسلحہ خانوں اور ایک فوجی اڈے ضبوہ پر بھی بمباری کی ہے۔یہ فوجی اڈا اب حوثی باغیوں کے قبضے میں ہے۔

اتحادی طیاروں نے ادھر مغربی صوبے الحدیدہ میں ایک فوجی ائیرپورٹ پر دو مرتبہ بمباری کی ہے۔سعودی عرب کی قیادت میں اتحاد نے گذشتہ منگل کو پانچ روزہ جنگ بندی کی مدت کے خاتمے کے بعد سے حوثی باغیوں کے ٹھکانوں پر حملے تیز کررکھے ہیں۔

عینی شاہدین نے بتایا ہے کہ ملک کے شمال میں سعودی عرب کی سرحد کے نشدیک واقع الحجہ کے مقام پر حوثیوں کے ایک اجتماع پر بمباری سے بارہ جنگجو ہلاک ہوگئے ہیں۔یمن کے وسطی علاقوں میں حوثی باغیوں اور صدر عبد ربہ منصور ہادی کے وفاداروں کے درمیان شدید لڑائی کی اطلاعات ملی ہیں۔وہاں ٹینکوں کی گولہ باری اور مارٹر گولوں کی آوازیں سنی گئی ہیں۔

جنوبی صوبے شبوۃ کے دارالحکومت عتق میں باغیوں اور مسلح قبائلیوں کے درمیان جھڑپیں ہوئی ہیں اور اس دوران لڑاکا طیاروں نے باغیوں پر بمباری کی ہے۔اس لڑائی میں سترہ حوثیوں سمیت اٹھائیس افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔جنوبی شہر عدن کے شمالی ،مشرقی اور مغربی علاقوں میں حوثیوں اور صدر عبد ربہ منصور ہادی کی وفادار فورسز کے درمیان جھڑپوں کی اطلاعات ملی ہیں۔