.

ایرانی سفیر کی ریاض دفتر خارجہ میں طلبی

مشھد ہوٹل میں زہریلے مواد سے سعودی شہریوں کی ہلاکت پر افسوس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی وزارت خارجہ کی میڈیا مینجمنٹ کمیٹی کے سربراہ سفیر اسامہ نقلی نے ایرانی شہر مشہد میں زہریلے مواد کے اخراج سے سعودی شہریوں کی ہلاکت کے واقعے پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے جس میں چار بچے جاں بحق جبکہ اٹھارہ دیگر بری طرح متاثر ہوئے۔

سفیر اسامہ نقلی نے بتایا کہ وقوعہ کے فوری بعد تہران میں سعودی ناظم الامور اور مشھد قونصل خانے کے دیگر عہدیداروں کے ہمراہ متاثرہ شہریوں کی خبر گیری کے لئے پہنچے اور انہیں فوری طور پر ضروری مدد اور علاج کی سہولت فراہم کی۔

سعودی سفارتخانہ نے فوری طور پر ایرانی وزارت خارجہ کے مشھد میں متعلقہ ڈیسک سے رابطہ کیا تاکہ اس واقعے کے بارے میں تحقیقات کی جا سکیں۔ ہم اس واقعے کو انتہائی اہمیت دے رہے ہیں اور سعودی عرب کی حکومت اس کا مسلسل فالو اپ کر رہی ہے۔

سفیر نقلی نے مزید بتایا ریاض وزارت خارجہ نے مملکت میں ایرانی سفیر کو دفتر خارجہ طلب کر کے اس واقعے پر اپنی تشویش اور اس امید کا اظہار کیا کہ ایرانی اتھاریٹز فوری ضروری تحقیقات کر کے واقعے سے متعلق امور کو منظر عام پر لائیں گی۔

ایرانی سفیر سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ تہران میں سعودی سفارتخانے اور مشھد میں ریاض کے قونصل خانے کو ہر ممکن تعاون اور زخمیوں کی دیکھ بھال کا موقع فراہم کریں۔ نیز ایران میں موجود سعودی شہریوں کو تمام ضروری مدد اور تحفظ فراہم کیا جائے۔