.

عدالت نے عمر البشیر کی جنوبی افریقا سے واپسی روک دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جنوبی افریقا کی ایک عدالت نے ایک نجی تنظیم کی دائرکردہ درخواست پر فیصلہ دیا ہے کہ جب تک عالمی فوج داری عدالت کی جانب سے سوڈانی صدر عمرالبیشر کی گرفتاری سے متعلق وارنٹ پر وہ کوئی فیصلہ نہیں دے دیتی ،وہ جوہانسبرگ سے باہر نہ جائیں۔

خیال رہے کہ حال ہی میں عالمی فوجداری عدالت نے بھی جنوبی افریقا سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ سوڈانی صدر کو اپنے ہاں دورے کے موقع پر گرفتار کرکے عدالت میں پیش کریں۔آئی سی سی نے ان کے خلاف دارفور میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کے الزامات کے وارنٹ گرفتاری جاری کر رکھے ہیں۔

سوڈانی صدر گذشتہ روز جنوبی افریقاکے شہر جوہانسبرگ پہنچے تھے جہاں انہیں افریقی یونین کے سربراہ اجلاس میں شرکت کرنا تھی۔

عالمی فوج داری عدالت کے چیف پراسیکیوٹر نے اپنےایک بیان میں کہا تھا کہ سوڈانی صدر محمد عمرالبشیر انسانیت کےخلاف جرائم میں ملوث ہونے کے الزام میں سنہ 2009ء میں جاری کردہ وارنٹ کے تحت عدالت کو مطلوب ہیں۔ جنوبی افریقا کی اخلاقی اور قانونی ذمہ داری ہے کہ وہ صدر البشیر کے گرفتاری وارنٹ پرعمل درآمد کرنے میں عالمی عدالت سے تعاون کرے۔