.

حوثی لیڈر پرجوتا پھینکنے والی یمنی صحافیہ کا مکان مسمار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے جنوبی شہر عدن میں حوثی باغیوں نے حال ہی میں جنیوا اجلاس کے دوران حوثی لیڈر حمزہ الحوثی پر جوتا پھینکنے والی صحافیہ ذکریٰ عراسی کا مکان مسمار کردیا ہے۔ دوسری جانب اس واقعے کو گذرے کئی دن گذرنے کے باوجود یوٹیوب پر اس کے ناظرین کی تعداد میں بدستور غیر معمولی اضافہ ہو رہا ہے۔

عدن کے ایک مقامی ذریعے نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کوبتایا کہ حوثی باغیوں نے حمزہ الحوثی پر جنیوا اجلاس کے دوران جوتا پھینکنے والی خاتون صحافی کا مکان مسمار کردیا ہے۔ ذرائع کے مطابق باغیوں نے ذکریٰ عراسی کے مکان کو دھماکہ خیز مواد نصب کر کے تباہ کیا ہے۔

ادھر دوسری جانب انٹرنیٹ پر جوتا پھینکے جانے کی ویڈیو کو دیکھنے والوں کی تعداد میں غیر معمولی اضافہ ہو رہا ہے۔ چند دن کے دوران اسے یمن کے اندر 20 لاکھ سے زائد بار دیکھا جا چکا ہے۔

خیال رہے کہ حال ہی میں جنیوا میں یمن بحران سے متعلق اقوام متحدہ کی زیر نگرانی ہونے والے اجلاس میں حوثیوں کی قیادت نے بھی شرکت کی تھی۔ اس موقع پر عدن سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون نامہ نگار نے حوثیوں کے ہاتھوں اپنے تین اقارب کی موت پر بہ طور احتجاج حوثی لیڈر حمزہ الحوثی کو جوتا دے مارا تھا۔