.

یمن سے ملحقہ سرحدی علاقے میں تین سعودی،ایک اماراتی فوجی شہید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے ساتھ واقع سعودی عرب کے سرحدی علاقے میں حوثی باغیوں کے راکٹ حملوں اور ان سے جھڑپوں میں ایک اماراتی اور تین سعودی فوجی شہید ہوگئے ہیں۔

سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) کی جانب سے سعودی عرب کی قیادت میں اتحاد کے جاری کردہ بیان کے مطابق جیزان کے علاقے میں بدھ کی شام ایک راکٹ گرا تھا جس سے دو سعودی فوجی شہید ہوئے ہیں۔

بیان میں یہ نہیں بتایا گیا کہ یہ راکٹ کہاں سے آیا تھا لیکن یمن کے سرحدی علاقے سے حوثی شیعہ باغی اپنے خلاف سعودی عرب کی قیادت میں فضائی مہم کے آغاز کے بعد سے آئے دن سرحد پار گولہ باری کرتے رہتے ہیں۔

بیان کے مطابق عسیر کے علاقے میں سعودی عرب کا ایک سرحدی محافظ جاں بحق ہوگیا ہے لیکن اس واقعے کی مزید تفصیل نہیں بتائی گئی ہے۔قبل ازیں سرحدی علاقے میں حوثی باغیوں کے ساتھ جھڑپوں میں ایک اماراتی فوجی شہید ہوگیا تھا۔

متحدہ عرب امارات بھی سعودی عرب کی قیادت میں حوثی مخالف اتحاد کا حصہ ہے اور اس اتحاد کے لڑاکا طیارے 26 مارچ سے یمن میں جلا وطن صدر عبد ربہ منصور ہادی کی حمایت میں حوثی باغیوں اور ان کے اتحادیوں کے خلاف فضائی حملے کررہے ہیں۔

اس فضائی مہم کے آغاز کے بعد سے سعودی عرب کے سرحدی علاقے میں حوثی باغیوں کے ساتھ جھڑپوں یا ان کی گولہ باری سے تینتالیس سعودی فوجی اور شہری جاں بحق ہوچکے ہیں۔دوسری جانب یمن میں حوثی ملیشیا اور حکومت نواز فورسز کے درمیان جھڑپوں میں دو ہزار چھے سو سے زیادہ افراد مارے گئے ہیں۔