.

جرمنی: روبوٹ نے ایک شخص کو 'قتل' کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جرمنی کے فوکس ویگن آٹو موبائل مینو فیکچرنگ پلانٹ میں روبوٹ نے ایک شخص کو 'قتل' کر دیا۔

فوکس ویگن کے ترجمان ہیکو ہل وگ نے بتایا کہ مذکورہ شخص ہلاکت فرینکفرٹ سے 100 کلومیٹر شمال میں واقع ایک پلانٹ میں گذشتہ روز ہلاک ہوا۔

ہل وگ نے بتایا کہ اسٹیشنری روبوٹ بنانے والی ٹیم میں شامل ایک 22 سالہ ٹھیکیدار کو روبوٹ نے جکڑ کر ایک دھاتی پلیٹ کے ساتھ مَسل دیا۔

انھوں نے مزید بتایا کہ ابتدائی تحقیقات سے معلوم ہوتا ہے کہ یہ ایک انسانی غلطی تھی اور اس سلسلے میں روبوٹ کو قصوروار نہیں ٹہرایا جاسکتا، جس کی پروگرامنگ، اسمبلی ( آٹو پارٹس جوڑنے ) کے عمل میں مختلف کاموں کو انجام دینے کے لحاظ سے کی گئی تھی۔

ہل وگ کے مطابق یہ روبوٹ پلانٹ میں ایک مخصوص جگہ پر آٹو پارٹس کو پکڑنے اور انھیں جوڑنے کا کام کرتا ہے۔

انھوں نے مزید بتایا کہ اسی مقام پر ایک دوسرا ٹھیکیدار بھی موجود تھا، جو واقعے میں محفوظ رہا، تاہم انھوں نے مزید معلومات دینے سے یہ کہہ کر انکار کردیا کہ ابھی اس سلسلےمیں تحقیقات کی جارہی ہیں۔

خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس (اے پی) کے مطابق پراسیکیوٹرز اس بات پر غور کر رہے ہیں کہ اس واقعے کا مقدمہ کن الزامات کے تحت اور کس کے خلاف درج کیا جائے؟