.

یمن: عرب اتحادیوں کی بمباری، دسیوں حوثی ہلاکتیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عرب اتحادی فوج کے معزول یمنی صدر صالح اور حوثی ملیشیا کے عدن اور حجہ کے علاقوں میں متعدد اہم ٹھکانوں پر بمباری کے نتیجے میں دسیوں جنگجو ہلاک اور زخمی ہو گئے۔

ان حملوں کے ساتھ عوامی مزاحمتی کمیٹیوں کے حوثی باغیوں کے شمال مغربی یمن کے ازال اور تھامہ صوبوں میں موجود اہداف کے خلاف حملوں اور مسلح گھات کارروائیوں میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

حوثی ملیشیا کے جنگجو ملک میں انسانی بنیادوں پر فائر بندی کی کوششیں کامیاب ہونے سے پہلے میدان جنگ میں کسی بڑی کامیابی کے لئے ایڑھی چوٹی کا زور لگا رہے ہیں۔

حوثی ملیشیا عدن اور تعز پر اندھا دھند گولا باری کر رہی ہیں جبکہ اتحادی فوج ان علاقوں میں باغیوں کی پیش قدمی روکنے کے لئے فوجی کیمپوں سمیت متعدد ٹھکانوں کو نشانہ بنا رہی ہے۔

سعودی بارڈر کے قریب واقع یمنی علاقے حجہ میں باغیوں کے ٹھکانوں پر بمباری کے نتیجے میں بڑی تعداد میں افراد ہلاک ہو زخمی ہوئے ہیں۔

اتحادی طیاروں کی دارلحکومت کے گرد و نواح میں اسلحہ گوداموں اور اہم اسٹرٹیجک ٹھکانوں پر بمباری سے صنعاء زوردار دھماکوں سے گونجتا رہا۔

میدان جنگ سے ذرائع کے حوالے سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق شمالی عدن میں بئر احمد کے السقاف فارم پر اتحادی طیاروں کی بمباری کے نتیجے میں 39 مسلح حوثی اور صالح نواز جنگجو مارے گئے۔

انہی ذرائع کے مطابق 31 بٹالین سے فرار ہونے والے حوثی باغیوں پر اتحادی طیاروں بمباری سے 6 ٹینک، کاٹوشیا راکٹ لانچر اور تین فوجی گاڑیاں تباہ ہوئیں۔ اتحادی بمباری کے بعد عوامی مزاحمتی کمیٹیوں کے رضاکاروں نے فوجی کیمپ کا مکمل کنٹرول حاصل کر لیا۔

ذرائع کے مطابق صعدہ گورنری کے شذا، رازح اور مران میں اتحادی طیاروں نے صالح اور حوثی ملیشیا کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا۔