.

امریکی شہنشاہ منشیات چڑیا کی مدد سے فرار میں کامیاب؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا میں چند روز قبل جیل سے ایک سرنگ کے راستے بدنام زمانہ منشیات فروش کے سخت ترین سیکیورٹی اور انتہائی محفوظ جیل سے فرار کے بعد امریکی پولیس میں کھلبلی مچی ہوئی ہے مگر تازہ تحقیقات سے پتا چلا ہے کہ "خواکیم غوزمان" کی جیل سے فرار میں ایک چڑیا نے مدد کی تھی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق جیل کے باہر سے 1500 میٹر طویل سرنگ کو "بارون" کے جیل میں متعین کمرے کے ٹوائلٹ تک لے جایا گیا تھا۔ سرنگ کی تکمیل کے بعد اس میں ہوا کی کثافت کا پتا چلانے کے لیے ایک چڑیا کو اندر بھیجا گیا۔ اس چڑیا نے بہ حفاظت گوزمان کی کوٹھڑی تک پہنچ کر یہ ثابت کیا کہ سرنگ سے فرار ہوا جا سکتا ہے۔

سرنگ کے راستے مبینہ طور پر جیل کے اندر بھیجی گئی چڑیا کو بعد ازاں مار کر کوڑے کی ٹوکری میں پھینک دیا گیا تھا۔ پولیس نے اس کا پوسٹم مارٹم کیا تو پتا چلا کہ جس دن گوزمان فرار ہوا۔ اس چڑیا کو اسی دن مارا گیا تھا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے مفرور مجرم کے خاندانی حالات پر بھی مختصر روشنی ڈالی ہے۔ میکسیکو کے مقامی ذرائع ابلاغ سے پتا چلتا ہے کہ "گوزمان" نے چار شادیاں کر رکھی تھیں۔ اس کی بیگمات میں ایک سابقہ ملکہ حسن بھی شامل ہے۔ ان چار بیگمات سے اس کے 10 بجے بچیاں ہیں۔ سابقہ ملکہ حسن سے اور کی دو جڑواں بچیاں ہیں جن کی عمریں اب تین سال ہو چکی ہیں۔

مقامی میڈٰیا نے پولیس کی تحقیقات کے حوالے سے بتایا ہے کہ مفرور ملزم "El Chapo" یعنی "بونا" کے لقب سے بھی جانا جاتا ہے مگر وہ امریکیوں میں کوکین زہر بانٹںے کے حوالے سے اب تک کا سب سے بڑا اور نہایت خطرناک شخص سمجھا گیا ہے۔ یہ ہر سال امریکیوں میں ہزاروں ٹن منشیات تقسیم کرتا رہا ہے۔

اخبار"ریفورما" کے مطابق 57 سالہ مفرور ملزم کے جیل سے فرار سے قبل اس کے فرار کے لیے بنائی گئی سرنگ کے اندر ایک چڑیا بھیجی گئی۔ اس چڑیا کو Altiplano کا نام دیا گیا ہے۔ گوزمان نے اسے اپنے کمرے میں پہنچنے کے بعد پکڑ کر مار دیا تھا اور اسے کوڑے کی ٹوکری میں پھینک دیا گیا تھا۔

میکسیکو کی جس جیل میں گوزمین کو رکھا گیا تھا اس میں جگہ جگہ مانیٹرنگ کے لیے خفیہ کیمرے نصب ہیں۔ مگر اس نے جیل کے ٹوائلٹ سے فائدہ اٹھاتے ہوئے سرنگ کو ٹوائلٹ تک پہنچا دیا تھا۔ ورنہ اس کی کوٹھڑی میں ہمہ وقت مانیٹرنگ کے لیے تین کیمرے کام کرتے ہیں اور تین جیلر اس کی نگرانی پر مامور رہتے تھے۔

تفتیش کاروں کا خیال ہے کہ گوزمین نے سرنگ کا راستہ بتانے والی چڑیا کو اس لیے مار دیا کیونکہ اس کی آمد کے بعد جیلروں کو شبہ ہو سکتا تھا۔ اس نے شواہد مٹانے کے لیے چڑیا کو ختم کر دیا۔ وہ قضائے حاجت کے لیے ٹوائلٹ گیا، جہاں اس نے ٹوائلٹ کے فرش کو اکھاڑ کر ایک سیڑھی کی مدد سے سرنگ میں اترا اور فرار ہو گیا۔

پولیس نے جیلروں کی مجرمانہ غفلت پر 18 اہلکاروں کو حراست میں لے کران سے پوچھ گچھ شروع کر دی ہے تاہم ابھی تک مفرور مجرم کا کوئی پتا چل سکا ہے اور نہ اس کے فرار میں معاونت کرنے والے خفیہ ہاتھوں کی نشاندہی ہو سکی ہے۔