.

یمن کے عوامی مزاحمت کاروں کو لحج میں کامیابی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

'العربیہ' کو اپنے ذرائع سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق عرب اتحادی فوج کے لڑاکا طیاروں نے لحج کے علاقے میں العند فوجی اڈے کے قریب حوثیوں کے ٹھکانوں پر شدید بمباری کی۔

ذرائع نے مزید دعوی کیا کہ فوجی اڈے کے قریب العند ٹرائی اینگل پر عوامی مزاحمت کاروں نے قبضہ کر لیا۔ اتحادی لڑاکا طیاروں نے وسطی یمن کے علاقے یریم میں واقع حوثیوں کے 55 فوجی بریگیڈ پر بھی بمباری کی۔

یہ کامیابیاں ایسے وقت ملی ہیں کہ جب عوامی مزاحمت کاروں نے ایک گھات کارروائی میں 22 حوثی باغی ہلاک کر دیئے۔ عوامی مزاحمت کاروں نے یہ کارروائی مشر قی تعز میں حوثی ملیشیا کی بڑھتی ہوئی فوجی پیش قدمی روکنے کے لئے کی۔

ادھر لحج کے علاقے میں معزول صدر کے حامیوں، حوثی ملیشیا کے جنگجووں کے درمیان شدید لڑائی ہو رہی ہے۔ یہ لڑائی شمالی لحج کے شمالی علاقے المسیمیر میں واقع بوزہ فوجی کیمپ کے قریب ہونے کی اطلاع ہے کیونکہ ایسی خبریں موصول ہوئی ہیں کہ حوثی ملیشیا نے بوزہ فوجی کیمپ میں محصور اپنے ساتھیوں کی مدد کی خاطر سادہ کپڑوں میں اپنے مسلح جنگجو بھیجے تھے۔

دوسری جانب عدن میں بچے کھچے حوثیوں کی تلاش کے لئے حتمی آپریشن جاری ہے۔ عوامی مزاحمت کاروں نے عدن کے شمالی حصے میں حوثی باغیوں کے ٹھکانوں پر توپخانے سے گولا باری کی۔ عینی شاہدین کے مطابق یمن کی قومی فوج مغربی عدن کے علاقے البریقہ کی سمت پیش قدمی کرتے دیکھی گئی ہے تاکہ شمالی علاقے میں چھپے مفرور عناصر کو گرفتار کیا جا سکے.

قبل ازیں یمنی نائب صدر خالد بحاح نے اعلان کیا تھا کہ جنوبی ساحلی شہر عدن مکمل طور پر عوامی مزاحمت کے کنڑول میں آنے کا اعلان کیا تھا۔