.

بحرین : دہشت گردی کے حملے میں دو پولیس اہلکار ہلاک

شیعہ اکثریتی گاؤں میں بم دھماکے میں 6 پولیس اہلکار زخمی ،ایک کی حالت نازک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بحرین کے دارالحکومت منامہ سے جنوب میں واقع شیعہ اکثریتی گاؤں سترہ میں ایک بم حملے میں دو پولیس اہلکار ہلاک اور چھے زخمی ہوگئے ہیں۔

بحرین کی وزارت داخلہ نے منگل کے روز اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر اطلاع دی ہے کہ سترہ کے علاقے میں ڈیوٹی پر مامور پولیس اہلکاروں کو دہشت گردی کے حملے میں نشانہ بنایا گیا ہے۔وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ زخمی پولیس اہلکاروں کو اسپتال منتقل کردیا گیا ہے اور ان میں ایک کی حالت تشویش ناک ہے جبکہ پانچ معمولی زخمی ہوئے ہیں۔

بحرینی حکام نے ابتدائی تحقیقات کے حوالے سے بتایا ہے کہ سترہ میں پولیس اہلکاروں پر بم حملے کے لیے استعمال کیا گیا بارود اس دھماکا خیز مواد سے مشابہ ہے جس کو ایران سے بحرین میں اسمگل کرنے کی کوشش کی گئی تھی۔

حکومت نے ہفتے کے روز اسلحہ اور گولہ بارود ملک میں اسمگل کرنے کی ایک سازش ناکام بنانے کی اطلاع دی تھی اور ایران سے یہ اسلحہ اسمگل کرکے لانے والے دو بحرینی شہریوں کو گرفتار کر لیا تھا۔اس واقعے کے بعد بحرین نے تہران میں متعیّن اپنے سفیر کو بھی مشاورت کے لیے واپس طلب کر لیا تھا۔

حکام نے گرفتار افراد کے نام مہدی صباح عبدالمحسن محمد اور عباس عبدالحسین عبداللہ محمد بتائے ہیں۔ اول الذکر مشتبہ شخص نے مبینہ طور پر اگست 2013ء میں ایران میں عسکری تربیت حاصل کی تھی ۔انھوں نے تفتیش کے دوران بحرین کے پانیوں سے باہر ایک ایرانی مشتبہ شخص سے اسلحہ اور گولہ بارود سے لدے کنٹینر کو وصول کرنے کا اعتراف کیا ہے۔