.

امریکا دو روز میں مصر کو آٹھ ایف 16 لڑاکا طیارے دے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا آیندہ دو روز میں مصر کو آٹھ ایف سولہ بلاک باون لڑاکا طیارے مہیا کردے گا۔

قاہرہ میں امریکی سفارت خانے کی جانب سے جمعرات کو جاری کردہ ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ ان کے علاوہ چار مزید ایف سولہ لڑاکا طیارے مصر کو اسی سال موسم خزاں میں مہیا کردیے جائیں گے۔

واضح رہے کہ امریکی صدر براک اوباما نے مارچ میں مصر کو اسلحہ مہیا کرنے پر عاید پابندی ختم کردی تھی اور اس کو ایک ارب تیس کروڑ ڈالرز مالیت کا اسلحہ اور ہتھیار مہیا کرنے کی اجازت دے دی تھی۔امریکا کیمپ ڈیوڈ معاہدے کے تحت مصر کو اتنی مالیت کا سالانہ دفاعی سامان اور اسلحہ مہیا کرتا ہے۔

مصری صدر عبدالفتاح السیسی کی حکومت کی جانب سے سابق حکمراں جماعت اخوان المسلمون کے قائدین اور کارکنان کے خلاف خونریز کریک ڈاؤن کے بعد امریکا نے یہ امدادی رقم روک لی تھی۔ اس کریک ڈاؤن پر امریکی حکام اور کانگریس کے ارکان نے گہری تشویش کا اظہار کیا تھا۔ان کے علاوہ انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں نے بھی مصری فورسز پر انسانی حقوق کو پامال کرنے کے الزامات عاید کیے تھے۔

مصر اور امریکا کے درمیان تعلقات میں سابق منتخب صدر ڈاکٹر محمد مرسی کی برطرفی کے معاملے پر کئی ماہ تک سرد مہری پائی جاتی رہی ہے۔عبدالفتاح السیسی نے مصر کی مسلح افواج کے سربراہ کی حیثیت سے جولائی 2013ء میں منتخب صدر ڈاکٹر محمد مرسی کو ان کے عہدے سے برطرف کردیا تھا۔جنرل السیسی بعد میں خود مصر کے منتخب صدر ٹھہرے تھے۔اس کے بعد امریکا اور مصر کے دو طرفہ تعلقات میں بتدریج بہتری آئی ہے۔