.

مصر اورامریکا کا ایک مرتبہ پھر مضبوط تعلقات بنانے کا اعادہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزیرخارجہ جان کیری نے کہا ہے کہ امریکا اور مصر کشیدگی اور انسانی حقوق کے بارے میں تشویش کے باوجود ایک مرتبہ پھر اپنے دوطرفہ تعلقات کی مضبوط بنیاد کی جانب لوٹ رہے ہیں۔

وہ قاہرہ میں اپنے مصری ہم منصب سامح شکری کے ساتھ مشترکہ نیوز کانفرنس سے خطاب کررہے تھے۔ انھوں نے کہا کہ ''دونوں ملکوں کے درمیان عسکری اور اقتصادی شعبوں میں تعاون مضبوط ہوا ہے''۔انھوں نے مصر کی جانب سے دہشت گردی کی کارروائیوں کے لیے اپنی فضائی حدود اور نہرسویز استعمال کرنے کی اجازت دینے کی تعریف کی۔

انھوں نے کہا کہ انھوں نے مصری حکام سے لیبیا کے ساتھ واقع سرحد پر تعاون بڑھانے کے حوالے سے بھی تبادلہ خیال کیا ہے۔اس موقع پر مصری وزیرخارجہ سامح شکری نے کہا کہ ان کے ملک کا امریکا کے ساتھ کوئی بڑا عدم اتفاق نہیں پایا جاتا ہے۔البتہ بعض امور پر ان کے درمیان نقطہ نظر کا فرق ہے اور یہ ایک فطری بات ہے۔

انھوں نے بتایا کہ انھوں نے جان کیری کے ساتھ جمہوریت اور انسانی حقوق سے متعلق امور پر بات چیت کی ہے اور انھیں مصر کی جانب سے یہ یقین دہانی کرائی ہے کہ مصری عوام کی امنگوں کے مطابق ان ایشوز پر توجہ مرکوز کی جائے گی۔

جان کیری نے اس موقع پر کہا کہ انھوں نے سامح شکری کے ساتھ اس بات سے اتفاق کیا ہے کہ مصر میں آیندہ پارلیمانی انتخابات آزادانہ ،شفاف اور منصفانہ ہونے چاہئیں اور سامح شکری نے انھیں بتایا ہے کہ یہ انتخابات خزاں کے اوائل میں ہوں گے۔

امریکی وزیرخارجہ نے گذشتہ ماہ ایران کے ساتھ طے پائے جوہری سمجھوتے کے حوالے سے کہا کہ اس سے مصر اور پورا خطہ زیادہ محفوظ ہوگا۔تاہم ان کا کہنا تھا کہ امریکا اور مصر اس بات کو تسلیم کرتے ہیں کہ ایران خطے میں عدم استحکام کی سرگرمیوں ملوّث ہے۔اسی لیے اس بات کو یقینی بنانے کی ضرورت ہے کہ ایران کا جوہری پروگرام مکمل طور پر پُرامن رہے۔