.

ایرانی بحریہ نے امریکی ہیلی کاپٹر پر مشین گن تان لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی ذرائع ابلاغ کے مطابق خلیج عدن میں موجود ایرانی بحریہ کے جنگی بحری جہازوں نے امریکی فوجی ہیلی کاپٹر اور عرب اتحادی بحریہ کے لڑاکا جہازوں پر ہتھیار تان لئے۔

امریکی نشریاتی ادارے 'سی این این' نے ایک فوجی اہلکار کے حوالے سے بتایا کہ 25 جولائی کو اتحادی فوج کے دو بحری جہاز ایرانی جہاز سے چند ہی گز کے فاصلے پر تھے کہ جب جہاز ہر متعین ایرانی عملے نے اپنی مشین گن اتحادی بحری جہاز اور اس پر چند ہی لمحے لینڈ کرنے والے امریکی فوجی ہیلی کاپٹر پر تان لیں۔

رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ اتحادی فوج کے لڑاکا بحری جہاز اور اس پر لینڈ کرنے والے ہیلی کاپٹر کے عملے کو فوری طور پر احساس ہوا کہ ایرانی مشین گنیں تانے فوجیوں کے پیچھے ایک کیمرہ مین اس سارے منظر کی فلم بندی کر رہا تھا۔ فوجی اہلکار کا کہنا تھا کہ ہمیں نہیں معلوم کہ وہ ہم پر بندوق تانے اپنی تصاویر بنا رہے تھے؟ کیا وہ پروپیگنڈہ فلم بنا رہے تھے۔ کیا کوئی فوجی جوان یہ تصویریں اپنی گرل فرینڈ کو بھیجنے کے لئے اتار رہا تھا؟"

یہ سارا واقعہ ایک سے بھی کم منٹ کا تھا جس میں اتحادی جہاز سے نہ کوئی فائر ہوا اور نہ ہی کوئی دوسرا اقدام ہو سکا۔ اہلکار کے مطابق لڑاکا بحری جہاز کے ڈیک پر اترنے والا ہیلی کاپٹر معمول کے شیڈول کے مطابق وہاں سے دوبارہ پرواز کر گیا

حکام نے یہ بتانے سے انکار کر دیا کہ اتحادی فوج کے زیر استعمال لڑاکا بحری جہاز کا تعلق کس رکن ملک سے تھا، تاہم انہوں نے اس امر کی تصدیق ضرور کی کہ ایرانی لڑاکا بحری جہاز اس کی بحری فوج کا باقاعدہ حصہ تھا۔

بدھ کی شام جاری ہونے والے بیان میں ساری صورتحال کو "غیر محفوظ اور غیر پیشہ وارانہ" صورتحال سے تعبیر کیا گیا۔ امریکی بحریہ نے واقعے کی تصاویر بنائیں تاہم اسے میڈیا کے لئے جاری نہیں کیا گیا۔