.

بھارتی وزیراعظم کی تاریخی دورے پر یو اے ای آمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بھارتی وزیراعظم نریندرمودی متحدہ عرب امارات کے دو روزہ تاریخی دورے پر اتوار کو ابو ظبی پہنچے ہیں۔ گذشتہ چونتیس سال میں کسی بھارتی وزیراعظم کا یو اے ای کا یہ پہلا دورہ ہے۔

ابوظہبی کے ہوائی اڈے پر ولی عہد شیخ محمد بن زاید آل نہیان نے ان کا خیرمقدم کیا۔اس موقع پر یو اے ای کے دوسرے اعلیٰ حکام اور افسر بھی موجود تھے۔

یو اے ای کی سرکاری خبررساں ایجنسی وام کی رپورٹ کے مطابق ابوظبی کے ہوائی اڈے پر بھارتی وزیراعظم کا شاندار استقبال کیا گیا اور انھیں اکیس توپوں کی سلامتی دی گئی ہے۔اس موقع پر دونوں ملکوں کے قومی ترانے بجائے گئے۔

ابو ظبی آمد کے بعد وزیراعظم مودی نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر ایک تصویر اپ لوڈ کی ہے جس میں وہ شیخ محمد بن زاید آل نہیان سے ملاقات کررہے ہیں۔انھوں نے لکھا ہے کہ میں اس دورے کے بارے میں بہت پُرامید ہوں۔ مجھے یقین ہے کہ اس سے بھارت اور یواے ای کے درمیان دوطرفہ تعلقات کو فروغ ملے گا۔

واضح رہے کہ اس وقت یو اے ای میں قریباً چھبیس لاکھ بھارتی روزگار کے سلسلے میں مقیم ہیں اور اس خلیجی عرب ملک میں مقیم غیرملکی تارکین وطن میں ان کی سب سے زیادہ تعداد ہے۔ان میں کاروباری ٹائیکون ،مڈل کلاس اور مزدور شامل ہیں جو بڑے تعمیراتی منصوبوں پر کام کررہے ہیں۔

نریندر مودی کو اس دورے کی وجہ سے اپنی جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی سے وابستہ انتہا پسند ہندو گروپوں کی جانب سے سخت تنقید کا سامنا کرنا پڑا ہے۔وہ استقبالیہ تقریب کے بعد ابو ظبی میں شیخ زید مسجد کا دورہ کرنے والے تھے اور انھوں نے بھارتی تارکین وطن سے بھی ملاقات کرنا تھی۔