.

شامی حکومت کا دوما پر حملہ جنگی جُرم ہے: اقوام متحدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ کے سیاسی شعبے کے سربراہ نے شام کے دارالحکومت دمشق کے نواح میں واقع شہر دوما پر گذشتہ اتوار کو اسدحکومت کے فضائی حملے کو جنگی جرائم قرار دیا ہے۔اس فضائی حملے میں ایک سو افراد ہلاک اور دوسو سے زیادہ زخمی ہوگئے تھے۔

جیفرے فیلٹمین نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں بدھ کو بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ ''دوما پر فضائی حملہ ایک اور جنگی جُرم ہے اور اس کے ذمے داروں کو احتساب کے کٹہرے میں لایا جانا چاہیے''۔

سلامتی کونسل کے بند کمرے کے اجلاس میں شام کی صورت حال پر غور کیا جارہا ہے اور اس نے دم تحریر دوما میں ایک مصروف بازار پر تباہ کن بمباری کی مذمت میں بیان جاری نہیں کیا ہے۔

شامی حکومت نے منگل کے روز اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی اسٹافن ڈی مستورا پر اس حملے کے ردعمل میں مذمتی بیان جاری کرنے پر متعصب ہونے کا الزام عاید کیا تھا اور کہا تھا کہ انھوں نے شامی طیاروں کے دوما پر فضائی حملے کی مذمت کرکے جانبداری کا مظاہرہ کیا ہے۔

ڈی مستورا نے سوموار کو ایک بیان میں باغی گروپ جیش الاسلام کے زیر قبضہ شہر پر شامی فوج کے فضائی حملے کی مذمت کی تھی اور کہا تھا کہ اس طرح کے حملے بالکل بھی قابل قبول نہیں ہیں۔