.

داعش میں ابوبکر البغدادی کا نائب عراق میں ہلاک

الحاج معتز کی ہلاکت موصل شہر میں امریکی حملے میں ہوئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وائٹ ہاؤس کے اعلان کے مطابق دولت اسلامیہ 'داعش' کے سیکنڈ ان کمان عراقی شہر موصل کے قریب امریکی فضائیہ کے ایک حملے میں ہلاک ہو گیا۔

نیشنل سیکیورٹی کونسل کے مطابق ہلاک ہونے والے داعش رہنما کا اصل نام فاضل احمد الحیالی تھا جبکہ وہ الحاج معتز کے نام سے زیادہ جانا جاتا تھا۔ معتز، داعش کے ایک اور رہنما کی معیت میں کہیں جا رہا تھا کہ اس کی گاڑی پر امریکی لڑاکا طیاروں نے بمباری کی۔ یاد رہے کہ الحیالی عراق اور شام کے درمیان اسلحہ، گولا بارود اور مختلف کارروائیوں کے لئے درکار دیگر لوازمات کی منتقلی کے لئے کوارڈی نیشن کا کام کرتا تھا۔

امریکی نیشنل سیکیورٹی کونسل کے ترجمان نیڈ پرائس کا کہنا ہے کہ الحیالی کی ہلاکت سے داعش کی کارروائیوں پر انتہائی برا اثر پڑے گا کیونکہ تنظیم میں اس کا اثر ورسوخ میڈیا، عطیات جمع کرنے سے لیکر مختلف کارروائیوں میں لاجسٹک سپورٹ فراہمی میں انتہائی اہمیت کا حامل ہوتا تھا۔

وائٹ ہاؤس کے مطابق مقتول رہنما داعش کے سربراہ ابوبکر البغدادی کا دست راست تھا اور وہ عراق میں داعش کی کارروائیوں کا نگران تھا۔ الحیالی نے گذشتہ دو برسوں میں داعش کی کارروائیوں کو منظم کرنے میں اہم کردار ادا کیا۔ اس ضمن میں دو ہزار چودہ کو موصل پر کیا جانے والا حملہ قابل ذکر ہے۔