سی آئی اے کا شام میں داعش مخالف 'خفیہ ڈرون آپریشن'

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایک امریکی اخبار کے مطابق شام میں موجود دولت اسلامیہ عراق وشام 'داعش' کے رہنمائوں کو نشانہ بنانے کے لئے امریکی خفیہ ایجنسی 'سی آئی اے' اور سپیشل فورسز ایک خفیہ ڈرون حملوں کی مہم چلا رہے ہیں۔

امریکی اخبار 'واشنگٹن پوسٹ' کے مطابق امریکی فوج کے داعش کے خلاف جاری دوسرے آپریشنز سے علیحدہ اس خفیہ آپریشن کے دوران ڈرون طیاروں کے ذریعے سے شدت پسند رہنمائوں کو نشانہ بنایا جاتا ہے۔

یہ حملے داعش کے خلاف قائم جوائنٹ سپیشل آپریشنز کمانڈ کی قیادت میں ہورہے ہیں جبکہ سی آئی اے ان حملوں کے لئے داعشی رہنمائوں کی شناخت اور تلاش کا کام کرتی ہے۔

امریکی عہدیداران کے مطابق اس آپریشن کے تحت ابھی تک صرف چند حملے ہی کئے گئے ہیں جن میں داعش کے اعلیٰ عہدیداران کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

اس خفیہ آپریشن کی وجہ سے ہلاک ہونے والے داعشی رہنمائوں میں برطانیہ سے تعلق رکھنے والا ہیکر جنید حسین بھی شامل تھا جس پر الزام تھا کہ وہ مغرب میں حملوں کے لئے داعش کے حامیوں کو اکٹھا کررہا ہے۔

ڈرون حملوں کو واشنگٹن میں سیاسی طور پر متنازعہ سمجھا جاتا ہے اور صدر براک اوباما چاہتے ہیں کہ سی آئی اے دوبارہ سے جاسوسی کی اپنی بنیادی سرگرمی کی طرف واپس آجائے اور فوجی کارروائیوں میں براہ راست حصہ نہ لے۔ اوباما کے مطابق فوجی کارروائیوں کی سربراہی کا کردار پینٹاگون کو دینا چاہئیے ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں