سعودی عرب: داعش سے وابستہ دو مطلوب دہشت گرد گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی سکیورٹی فورسز نے سخت گیر جنگجو گروپ دولت اسلامیہ عراق وشام (داعش) سے وابستہ دو مطلوب مشتبہ افراد کو گرفتار کر لیا ہے اور مشتبہ مسلح افراد کا پکڑنے کے لیے سکیورٹی آپریشن جاری ہے۔

سعودی وزارت داخلہ کے ترجمان میجر جنرل منصور الترکی کی جانب سے بدھ کو جاری کردہ ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ اس کو دارالحکومت الریاض کے علاقے المونسيہ اور ضرما شہر میں ایک گروپ سے تعلق رکھنے والے افراد کی مشتبہ حرکات وسکنات سے متعلق معلومات ملی تھیں۔

سعودی سکیورٹی فورسز نے منگل کی شب المونسيہ میں ایک کارروائی کے دوران دو مطلوب مشتبہ افراد کو گرفتار کیا ہے۔سکیورٹی اہلکاروں نے ان کے مکان کا محاصرہ کر لیا تھا جس کے دوران انھوں نے سکیورٹی اہلکاروں پر فائرنگ کردی اور دستی بم پھینکے تھے۔اس کے باوجود سکیورٹی اہلکار ان پر قابو پانے میں کامیاب ہوگئے اور انھیں گرفتار کر لیا ہے۔

گرفتار دونوں مشتبہ افراد سگے بھائی ہیں۔بڑے کا نام احمد محمد سعید جابر الزہرانی (عمر اکیس سال) اور چھوٹے کا نام محمد سعيد جابر الزہرانی(عمر انیس سال) ہے۔الریاض کے نزدیک واقع ضرما میں سکیورٹی فورسز نے ایک مکان میں مقیم مشتبہ افراد کی گرفتاری کے لیے چھاپہ مار کارروائی کی تھی لیکن وہ وہاں نصب سکیورٹی کیمروں کی مدد سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

وزارتِ داخلہ کے بیان کے مطابق وہ اومان کی ایک جعلی نمبر پلیٹ والی کار میں سوار تھے اور انھوں نے سکیورٹی اہلکاروں پر فائرنگ بھی کی تھی۔جوابی کارروائی میں اس کار کو نقصان پہنچا تو ان مسلح افراد نے ایک اور گاڑی چھین لی اور علاقے سے فرار ہوگئے۔ان مشتبہ افراد کی گرفتار کے لیے کارروائی جاری ہے اور اس کے دوران بھاری تعداد میں ہتھیار اور نقد رقم برآمد کر لی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں