یمنی وزیراعظم خالد بحاح کی بعض وزراء سمیت عدن واپسی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

العربیہ نیوز نے اطلاع دی ہے کہ یمن کے نائب صدر اور وزیراعظم خالد بحاح اپنی کابینہ کے سات وزراء سمیت بدھ کو سعودی عرب سے ایک خصوصی پرواز کے ذریعے جنوبی شہرعدن واپس آگئے ہیں۔وہ اب اپنے ملک میں رہ کر امورِمملکت چلائیں گے۔

ذرائع نے العربیہ نیوز کو بتایا ہے کہ سعودی دارالحکومت الریاض سے یمن لوٹنے والے وفد میں وزیرداخلہ عبدہ محمد الحذیفی ،منصوبہ بندی اور بین الاقوامی تعاون کے وزیر محمد التمیمی ،محنت اور سماجی بہبود کی وزیر سمیرا عبید کے علاوہ وزیر مواصلات اور دوسرے اعلیٰ عہدے دار شامل ہیں۔

یمنی حکومت کے ترجمان راجح بادی ،خارجہ امور کے انڈر سیکریٹری آف اسٹیٹ عثمان العود اور خزانے اور تیل کے وزرائے مملکت بھی الریاض سے واپس آنے والے حکومتی وفد میں شامل ہیں۔

خالد بحاح قبل ازیں یکم اگست کو مختصر وقت کے لیے عدن آئے تھے اور وہ پھر واپس الریاض چلے گئے تھے جہاں وہ صدر عبد ربہ منصور ہادی کے ہمراہ مقیم تھے اور وہیں سے یمنی حکومت چلا رہے تھے۔یمنی صدر ،وزیراعظم اور ان کی کابینہ کے ارکان عدن پر حوثی باغیوں کے قبضے کے بعد سعودی عرب منتقل ہوگئے تھے۔

جولائی میں صدر منصور ہادی کی وفادار فورسز اور جنوبی مزاحمت سے تعلق رکھنے والے جنگجوؤں نے سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد کی فضائی مدد سے عدن اور دوسرے جنوبی شہروں پر دوبارہ کنٹرول حاصل کر لیا تھا اور وہاں سے حوثی باغیوں اور ان کی اتحادی ملیشیاؤں کو نکال باہر کیا تھا۔حکومتی ترجمان راجح بادی نے برطانوی خبررساں ادارے رائیٹرز کو بتایا ہے کہ ''وزیراعظم خالد بحاح اور ان کے ساتھ واپس آنے والے وزراء اب عدن ہی میں مستقل قیام کریں گے''۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں