فیس بک صارفین کے پرزور اصرار پر 'ڈس لائیک' بٹن کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سماجی رابطے کی معروف ویب سائٹ 'فیس بک' نے بالآخر صارفین کے دبائو میں آکر اعلان کیا ہے کہ وہ جلد ہی 'ڈس لائیک' یا ناپسندیدگی کے اظہار کا بٹن جاری کر دے گی اور اس کو مستقبل قریب میں ٹیسٹ کیا جائیگا۔

فیس بک کے بانی 'سی ای او' مارک زکربرگ نے امریکی ریاست کیلی فورنیا کے شہر مینلو پارک کے پبلک ٹائون ہال کی میٹنگ میں کہا "بالآخر ہم نے آپ کی آواز سن لی۔"

فیس بک کے ایک صارف کی جانب سے ایک سوال پیش کیا گیا جو کہ اس سے پہلے بھی کئی بار پوچھا جاچکا ہے کہ فیس بک معذرت، دلچسپ یا ناپسندیدگی کے اظہار کے لئے کوئی بٹن کیوں نہیں جبکہ کسی بھی پوسٹ پر اپنی حمایت کے اظہار کے لئے لائیک کا بٹن موجود ہے؟

زکر برگ کا جوابا کہنا تھا "غالبا سینکڑوں لوگ اس بارے میں سوال کرچکے ہیں اور آج ایک خاص دن ہے کیوںکہ آج وہ دن ہے کہ جب میں یہ اعلان کرسکتا ہوں کہ ہم اس عمل پر کام کررہے ہیں اور جلد ہی اس بٹن کی ٹیسٹنگ کا عمل شروع ہوجائیگا۔"

فیس بک کے بانی کا کہنا تھا "ہمیں یہ قدم اٹھانے میں تھوڑا وقت لگا کیوںکہ ہم فیس بک کو کسی ایسے فورم میں تبدیل نہیں کرنا چاہتے تھے جہاں پر لوگ اپنے دوستوں کی پوسٹس پر پسندیدگی یا ناپسندیدگی کا اظہار کریں۔ یہ ایسی کمیونٹی تھی جو کہ ہمارے خواب کا حصہ نہیں تھی۔"

انہوں نے کہا کہ انہیں اس بات کا علم ہے کہ کسی کے خاندان کے رکن کی موت کی خبر یا پناہ گزینوں کے موجودہ بحران کی خبر پر لائیک کرنا کتنا عجیب محسوس ہوتا ہے اور فیس بک پر ایک بہتر راستہ موجود ہونا چاہئیے ہے جس سے لوگ اپنی مکمل سپورٹ کا اظہار کرسکیں۔

زکر برگ کا کہنا تھا "ہم اس منصوبے پر کچھ دیر سے کام کررہے ہیں۔ حیرت انگیز طور پر ایسا بٹن تیار کرنا بہت مشکل کام ہے۔ مگر ہمیں کچھ اندازہ ہے کہ ہم اس نئے فیچر کو ٹیسٹ کرنے کے لئے تیار ہورہے ہیں اور اس کو ٹیسٹ کرنے کے بعد ہم اس فیچر کو تمام صارفین کے لئے جاری کردیں گے۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں