بغداد: پولیس پر تباہ کن خودکش بم حملے،14 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عراق کے دارالحکومت بغداد میں پولیس پر دو خودکش بم حملے کیے گئے ہیں جن کے نتیجے میں چودہ افراد ہلاک اور تیس سے زیادہ زخمی ہوگئے ہیں۔

عراقی پولیس کا کہنا ہے کہ جمعرات کی صبح یہ دونوں بم حملے پیدل بمباروں نے کیے ہیں۔انھوں نے بارود سے بھری جیکٹیں پہن رکھی تھیں۔بغداد کے علاقے باب الشرجی میں ایک خودکش بم دھماکے میں ایک پولیس افسر اور آٹھ عام شہری ہلاک ہوگئے ہیں۔اس واقعے میں اکیس افراد زخمی ہوئے ہیں۔

عراقی دارالحکومت کے علاقے باب المعظم میں ایک اور خودکش بمبار نے پولیس پر حملہ کیا ہے۔اس بم دھماکے میں دو پولیس اہلکاروں سمیت پانچ افراد ہلاک اور بارہ زخمی ہوگئے ہیں۔بغداد کے دو اسپتالوں کے حکام نے ان ہلاکتوں اور زخمیوں کی تصدیق کی ہے۔

فوری طور پر کسی گروپ نے ان بم حملوں کی ذمے داری قبول نہیں کی ہے۔تاہم عراق اور شام میں برسرپیکار سخت گیر جنگجو گروپ دولت اسلامیہ (داعش) ماضی میں بغداد اور دوسرے شہروں میں اس انداز میں کیے گئے خودکش بم حملوں اور بم دھماکوں کی ذمے داری قبول کرتا رہا ہے۔

واضح رہے کہ عراقی سکیورٹی فورسز ملک کے شمال اور شمال مغربی صوبوں میں داعش کے جنگجوؤں کے خلاف جنگ آزما ہیں۔عراقی فورسز کی کارروائیوں کے ردعمل میں داعش کے جنگجو بغداد اور دوسرے شہروں میں سکیورٹی فورسز اور اہل تشیع پر خاص طور پر خودکش بم حملے یا ٹرک بم حملے کرتے رہتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں