اسد ہر صورت اقتدار چھوڑیں گے، وقت کا تعین کرنا ہے: امریکا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی وزیر خارجہ #جان_کیری کا کہنا ہے کہ #شام کے صدر #بشار_الاسد کو ہر صورت اقتدار چھوڑنا ہوگا مگر ان کے جانے کا وقت مذاکرات سے طے کیا جائے گا۔

برطانوی وزیر خارجہ فلپ ہیمنڈ سے ملاقات کے بعد کیری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے #روس اور #ایران سے مطالبہ کیا کہ وہ اپنا اثر ورسوخ بشار کو مذاکرات کی طرف لے کر آئیں۔

ان کا کہنا تھا کہ شام میں چار سال سے جاری جنگ اور دن بدن بگڑتے پناہ گزینوں کے بحران کو ختم کرنے کے لئے فوری طور پر سیاسی حل ڈھونڈنے کی ضرورت ایک بار پھر سامنے آئی ہے۔

کیری کا کہنا تھا "ہمیں مذاکرات کو فوری شروع کرنا ہوگا۔ ہمیں وہی عمل شروع کرنا چاہتے ہیں اور ہمیں امید ہے کہ روس اور ایران یا کوئی بھی اور اثر ورسوخ رکھنے والا ملک اس عمل کو شروع کرنے میں مدد کرے گا۔ ہم مذاکرات شروع کرنے کو تیار ہیں۔ کیا اسد مذاکرات کرنے کو تیار ہیں؟ کیا روس انہیں مذاکرات کی میز پر لانے کو تیار ہے؟"

بشار الاسد کو اقتدار سے ہٹانے سے متعلق ان کا کہنا تھا "یہ کام پہلے دن یا پہلے مہینے میں مکمل ہونا ضروری نہیں ہے۔ ایک عمل موجود ہے جس کے ذریعے سے تمام فریق مل بیٹھ کر یہ فیصلہ کریں گے۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں