.

منیٰ بھگڈر میں شہادتوں پر دلی افسوس ہے: شاہ سلمان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے منیٰ میں بھگڈر کے دوران شہید اور زخمی ہونے والوں حجاج کے لواحقین سے دلی اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اللہ کے مہمانوں کی خدمات ہمارا سرمایہ افتخار ہے۔

حج کے موقع پر خدمات سرانجام دینے والے سیکیورٹی اہلکاروں کی ہائی کمان کے ایک اجلاس کی صدارت کے بعد اپنے نشری خطاب میں خادم الحرمین الشریفین کا کہنا تھا کہ ہم مملکت کی سرحدوں کا دفاع کرنے والوں کو فراموش نہیں کر سکتے۔ حج سیزن کے دوران لگے بندھے طریقہ کار پر نظرثانی کے لئے متعلقہ اداروں کو ہدایت کر دی گئی ہے۔

ترجمان وزارت داخلہ نیوز کانفرنس

قبل ازیں سعودی عرب کی وزارت داخلہ کے ترجمان میجر جنرل منصور الترکی نے صحافیوں کو بتایا کہ بھگڈر کی جگہ گذشتہ برسوں کی نسبت حاجیوں کی غیر معمولی تعداد جمع ہو گئی تھی۔

ان کا کہنا تھا کہ تحقیقات میں اس بات کا تعین ہو سکے گا کہ اتنی بڑی تعداد میں حجاج کیونکہ حادثہ کی جگہ پہنچے۔ منیٰ میں ایک نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس کی وجہ ابھی تک معلوم نہیں ہو سکی۔

درایں اثنا وائٹ ہاؤس نے جمعرات کے روز بھگڈر کے دلخراش واقعے میں انسانی جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ امریکا کے علاوہ متعدد دوسرے مغربی، یورپی دارلحکومتوں سے بھی تعزیت کے پیغامات آ رہے ہیں۔ اسلامی اور عرب دنیا سے بھی عیدالاضحی کے روز افسوسناک واقعے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر دلی دکھ اور رنج کا اظہار کیا جا رہا ہے۔