.

برطانیہ :نوعمر لڑکے کو سابقہ کالج پرحملے کی سازش پرعمرقید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانیہ میں ایک عدالت نے ایک نوعمر لڑکے کو اپنے سابقہ کالج میں بندوق اور بم سے حملے کی سازش کے الزام میں قصور وار قرار دے کر آٹھ سال قید کی سزا سنائی ہے۔

جج پال سلوآن نے انیس سالہ لیام لائبرڈ کو جمعہ کے روز عمر قید کی سزا سنائی ہے اوراس کو آٹھ سالہ قید کے دوران پیرول پر رہا بھی نہیں کیا جاسکے گا۔جج نے اپنے فیصلے میں مجرم کو مخاطب کر کے کہا ہے کہ ''یہ بس وقت ہی کا معاملہ رہ گیا تھا اور آپ نے اپنے منصوبے کو عملی جامہ پہنا دینا تھا''۔

عدالت نے لیام لائبرڈ پر جولائی میں آن لائن ایک سیمی آٹو میٹک ہینڈ گن اور بارود خریدنے کے الزام میں فرد جرم عاید کی تھی۔اس نے یہ اسلحہ انگلینڈ کے شمال میں واقع نیو کیسل کالج میں قتل عام کی سازش کو عملی جامہ پہنانے کے لیے خرید کیا تھا۔اس لڑکے کو گڑبڑ کے الزام میں کالج سے نکال دیا گیا تھا۔

مجرم کے لیپ ٹاپ سے ایک فائل برآمد ہوئی تھی جس میں اس نے لکھا تھا کہ ''آپ لوگوں نے میری پوری زندگی تباہ کردی،آج آپ مجھ سے کسی خیر توقع نہ رکھیں''۔

لائبرڈ کو گذشتہ سال نومبر میں پولیس نے گرفتارکیا تھا اور اس کی گرفتاری فیس بُک پر اس کے رابطے میں ایک شخص کی پولیس کو اطلاع کے نتیجے میں عمل میں آئی تھی۔اس شخص نے مجرم کی سوشل میڈیا پر خطرناک تحریروں کے بارے میں پولیس کو بتایا تھا۔