.

یمن میں عرب اتحادی فوج کا اہم ساحلی شہر پر قبضہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں عوامی مزاحمت کی حمایت یافتہ عرب اتحادی فوج باب المندب سے چالیس کلومیٹر دور شمال میں واقع ساحلی شہر ذباب کو حوثی باغیوں سے تسلط سے آزاد کروانے کے بعد حتمی کلین اپ آپریشن میں مصروف ہے تاکہ شہر کو حوثی ملیشیا کی باقیات سے مکمل طور پر پاک کیا جا سکے۔ باب المندب کے مشرقی علاقے میں واقع العمری فوجی کیمپ پر بھی مزاحمت کاروں کا مکمل قبضہ ہے۔

ادھر مشترکہ فوج صراوح شہر پر قبضے کے بعد باغی ملیشیا کے جنگجوؤں کی گرفتاری کے لئے کلین اپ آپریشن کر رہی ہے جس کے بعد اس محاذ کی باغیوں سے جلد واپسی کی امید پیدا ہو گئی ہے۔

تعز شہر میں مزاحمت کاروں اور عرب اتحاد پر مبنی مشترکہ فوج نے پیش قدمی جاری رکھتے ہوئے حوثی اور علی عبداللہ صالح کے جنگجوؤں کی جانب سے در اندازی کو کوشش ناکام بنا دی ہے اور انہیں بڑے پیمانے پر جانی نقصان پہنچایا ہے۔

تعز کی ماویہ ڈائریکٹوری کے علاقے السویداء ہونے والی خونریز لڑائی میں میں حوثیوں کے اہم کمانڈروں سے سمیت 23 مسلح حوثی ہلاک ہونے کی اطلاعات ہیں۔ یہ جھڑپیں اس وقت ہوئیں جب باغیوں نے تعز کے مشرقی علاقے میں واقع ماویہ ڈائریکٹوری کی جانب پیش قدمی کی ناکام کوشش کی۔

درایں اثنا دارلحکومت صنعاء کے جنوبی علاقے سے بھی ذمار قبیلے کے ہتھیار بند سرداروں اور حوثی باغیوں کے درمیان لڑائی کی اطلاعات ہیں۔