.

ایران: لبنانی نژاد امریکی شہری جاسوسی کے الزام میں گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران میں حکام نے ایک لبنانی نژاد امریکی شہری کو جاسوسی کے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔ایرانی حکام کا کہنا ہے کہ گرفتار شخص کا امریکی فوج اور انٹیلی جنس ایجنسیوں سے تعلق ہے۔

ایران کے ایک سرکاری نشریاتی ادارے نے اطلاع دی ہے کہ اس گرفتار شخص کا نام نزار ذکا ہے ۔وہ انفارمیشن ٹیکنالوجی کا ماہر ہے۔لبنانی میڈیا نے گذشتہ ہفتے یہ اطلاع دی تھی کہ نزار 18 ستمبر کو ایرانی دارالحکومت تہران میں ایک کانفرنس میں شرکت کے بعد لاپتا ہوگیا تھا۔

آئی آر آئی بی نے منگل کو پہلی مرتبہ حکام کے حوالے سے اس کی گرفتاری کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ اس کے امریکی انٹیلی جنس اور فوجی اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ گہرے تعلقات ہیں۔

قبل ازیں ایران میں ایک ایرانی نژاد امریکی شہری سماک نمازی کی گرفتاری کی اطلاع سامنے آئی تھی۔وہ ایران میں اپنے خاندان سے ملنے کے لیے آئے تھے اور اکتوبر کے وسط میں لاپتا ہوگئے تھے۔

ایران کے سراغرسانی کے وزیر محمود علاوی نے سوموار کو ایک بیان میں کہا تھا کہ ان کی وزارت ملک میں غیرملکی اثرات سے نمٹنے کے طریقوں پر غور کررہی ہے۔ایرانی حکام نے سوموار کو دو ایرانی صحافیوں کو بھی گرفتار کر لیا تھا جبکہ ایرانی عدلیہ کے سربراہ نے مقامی صحافیوں اور فن کاروں کے خلاف حکام کے کریک ڈاؤن کی بین الاقوامی مذمت کو مسترد کردیا تھا۔