.

روس نے مصری ایئر لائن کی پروازیں بند کر دیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روسی حکومت نے مصر کی قومی ایئر لائن کے مسافر بردار طیاروں کے اپنے ملک میں داخلے پر پابندی کا فیصلہ کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مصری ایئر لائن کے ایک عہدیدار نے بتایا ہے ماسکو ایوی ایشن اتھارٹی نے مصری ہوائی جہازوں کو روس میں اترنے سے منع کر دیا ہے۔

مصری عہدیدار نے ماسکو کے ڈوموڈیڈوفو ہوائی اڈے پر بتایا کہ روسی فضائی نگرانی کے ادارے"روز افیاٹزا" نے 14 نومبر [آج] بروز ہفتہ سے مصری ہوائی جہازوں کی آمد روک دی ہے۔

روسی حکومت کی جانب سے مصری ہوائی جہازوں کو اپنی سر زمین میں اترنے سے روکنے کا فیصلہ ایک ایسے وقت میں کیا گیا ہے جب دو ہفتے قبل مصر کے جزیرہ نما سیناء میں روس کا ایک مسافر بردار طیارہ گر کر تباہ ہو گیا تھا۔ شبہ ہے کہ طیارہ فنی خرابی سے نہیں بلکہ دہشت گردی کا شکار ہوا ہے۔

قاہرہ کا ردعمل

مصر کے شہری ہوا بازی کے وزیر حسام کمال نے اپنے ایک بیان میں روس کی جانب سے "EGYPT AIR" کے طیاروں کی آمد پر پابندی کے فیصلے کی تصدیق کی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ماسکو کے ڈوموڈیفو ہوائی اڈے کی انتظامیہ نے مصری ایئر لائن کے ایک ڈائریکٹر کو اپنے فیصلے سے مطلع کیا ہے اور کہا ہے کہ ہفتے کے روز سے مصر کے ہوائی جہاز روس کے لیے پروازیں نہیں کر سکیں گے۔

مصری وزیر کا کہنا تھا کہ روسی فیصلے کے بعد ماسکو کے لیے جانے والی "مصر ایئر" کی پروازوں کے لیے بک کی گئی نشستیں دوسری کمپنیوں کے طیاروں میں تبدیل کر دی گئی ہیں۔ اسی طرح ماسکو میں مصر ایئر کے لیے رکھی گئی نشتیں بھی تبدیل کی گئی ہیں۔
حسام کمال کا کہنا تھا کہ ہم روسی حکومت سے مسلسل رابطے میں ہیں اور مصر ایئر لائن کے طیاروں کی آمد روکنے کے بارے میں ان سے معلومات حاصل کر رہے تاہم ہمیں اس حوالے سے سرکاری طور پر آگاہ نہیں کیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ مصری ایئر لائن کی ہفتے میں قاہرہ سے ماسکو کے درمیان تین پروازیں چلائی جاتی ہیں۔