.

داعش نے روسی طیارے میں رکھے بم کی تصویر جاری کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

داعش نے مصر کے شورش زدہ علاقے شمالی سیناء میں دوران پرواز تباہ ہونے والے روس کے مسافر طیارے میں رکھے گئے بم کی تصویر جاری کردی ہے اور کہا ہے کہ طیارے میں یہ بم مصر کے ساحلی شہر شرم الشیخ کے ہوائی اڈے پرسکیورٹی کو جُل دے کر پہنچایا گیا تھا۔

داعش کے آن لائن میگزین دابق میں ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ جنگجو گروپ نے پہلے عراق اور شام میں امریکا کی قیادت میں اتحاد میں شامل ممالک میں سے کسی ایک کا طیارہ تباہ کرنے کا منصوبہ بنایا تھا۔

اس کے بعد انھوں نے روس کی جانب سے 30 ستمبر کو شام میں جنگجوؤں کے ٹھکانوں پر فضائی حملوں کے آغاز پر اپنا یہ منصوبہ تبدیل کر لیا اور اس کے شرم الشیخ سے سے پرواز کرنے والے ایک طیارے کو نشانہ بنانے کا فیصلہ کیا تھا۔

اس میگزین میں سوفٹ ڈرنگ شیویپس گولڈ کے کین کی ایک تصویر شائع کی گئی ہے۔اسی کین میں بم فٹ کیا گیا تھا۔تصویر کے نیلے پس منظر میں ایک ڈیٹونیٹر اور سوئچ بھی نظر آرہا ہے۔اس کے علاوہ واقعے میں مرنے والے روسیوں کے چند ایک پاسپورٹس کی ایک تصویر بھی شائع کی گئی ہے اور ان کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ یہ ''مجاہدین'' کو ملے تھے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے لیے داعش کے آن لائن میگزین میں شائع ہونے والی ان تصاویر کی فوری طور پر تصدیق ممکن نہیں ہے۔داعش نے بدھ کو یہ بھی اطلاع دی ہے کہ انھوں نے چین اور ناروے سے تعلق رکھنے والے دو یرغمالیوں کو قتل کردیا ہے۔

واضح رہے کہ گذشتہ روز روس نے پہلی مرتبہ اس امر کی تصدیق کی تھی کہ گذشتہ ماہ مصر کے شورش زدہ علاقے جزیرہ نما سیناء میں اس کا ایک مسافر طیارہ بم دھماکے کے نتیجے میں تباہ ہوا تھا۔روسی صدر ولادی میر پوتین نے واقعے کے ذمے داروں کو ڈھونڈ نکالنے اور شام میں سخت گیر جنگجو گروپ داعش کے خلاف فضائی حملوں کو تیز کرنے کا حکم دیا تھا۔

روس اس سے پہلے امریکا اور بعض دوسرے مغربی ممالک کی ان انٹیلی جنس رپورٹس کی تردید کرتا رہا ہے جن میں کہا گیا تھا کہ 31 اکتوبر کو مسافر طیارہ دہشت گردی کی کارروائی کے نتیجے میں تباہ ہوا تھا۔روسی طیارہ جزیرہ نما سیناء کے ساحلی شہر شرم الشیخ سے سینٹ پیٹرزبرگ جا رہا تھا اور اڑان بھرنے کے چند منٹ کے بعد ہی تباہ ہوگیا تھا۔اس میں سوار تمام دو سو چوبیس افراد ہلاک ہوگئے تھے۔