.

بھارتی ریاست بہار میں شراب پر پابندی کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بھارت کی مشرقی ریاست بہار کے وزیر اعلی نے اعلان کیا ہے کہ اگلے برس اپریل تک ریاست میں شراب نوشی اور اس کی فروخت پر پابندی عاید کر دی جائے گی۔

یاد رہے پانچویں مرتبہ وزیر اعلی بننے والے نیتش کمار نے اپنی انتخابی مہم میں وعدہ کیا تھا کہ وہ کامیابی کی صورت میں شراب پر پابندی لگا دیں گے۔ انہوں نے ریاست کی خواتین ووٹرز سے وعدہ کیا کہ وہ وزیر اعلی بننے کے بعد فوری طور پر شراب نوشی کی ممانعت کر دیں گے۔

ریاست میں ہونے والے ایک عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے نیتش کمار نے کہا کہ میں سمجھتا ہوں کہ دیہی علاقے کی خواتین دوسروں سے زیادہ شراب نوشی سے متاثر ہوتی ہیں۔ میں نے حکومتی اہلکاروں کو پہلے ہی ہدایت کر دی ہے کہ وہ اگلے برس اپریل تک شراب نوشی کی ممانعت کے فیصلے پر مکمل عمل درآمد کو یقینی بنائیں۔

نتیش کمار نے یہ واضح نہیں کیا کہ منصوبہ پرعمل درآمد کی راہ میں آنے والے چینلجوں اور اس پابندی کے نتیجے میں ہونے والے مالی نقصان پر وہ کیسے قابو پائیں گے؟

گذشتہ برس شراب پر عاید ٹیکسوں کی مد میں بہار حکومت کو پانچ سو ملین ڈالرکی آمدن ہوئی۔ این ڈی ٹی وی پر فیصلے کے بارے میں رپورٹ میں سوال اٹھایا گیا ہے کہ یہ بات واضح نہیں کہ حکومت آمدن کا یہ نقصان کیونکر پورا کر پائے گی۔