.

لندن میٹرو کے حملہ آور کی تصاویر جاری، ملزم عدالت میں پیش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ہفتے کے روز #برطانیہ کے دارالحکومت #لندن کی زیرزمین چلنے والی میٹرو ٹرین کے ایک اسٹیشن پر چاقو سے حملہ کرکے دو افراد کو زخمی کرنے میں ملوث مشتبہ شدت پسند کی پہلی بار تصاویر سامنے آئی ہیں اور اس کی شناخت 29 سالہ محی الدین میر کے نام سے کی گئی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق محی الدین میر کو سوموار کے روز لندن کی ایک عدالت میں پیش کیا گیا۔ اس پر ایک 56 سالہ شخص کے قتل کا مقدمہ چلایا جا رہا ہے۔

لندن پراسیکیوٹرجنرل کا کہنا ہے کہ تفتیش کے دوران مبینہ حملہ آور کے موبائل فون سے دولت اسلامیہ "#داعش" کہلوانے والی عالمی شدت پسند تنظیم کی ویڈیوز ملی ہیں۔ موبائل ڈیٹا سے معلوم ہوتا ہے کہ وہ "داعش" کی ویب سائیٹ بھی سرچ کرتا رہا ہے۔ برطانوی اخبار 'دی سن' کے مطابق ملزم کے موبائل میں #شام میں ہونے والے فضائی حملوں کی تصاویر اور ویڈیوز بھی موجود ہیں۔

خیال رہے کہ ہفتے کے روز لندن کی ایک زیرزمین میٹرو اسٹیشن پر ایک شخص نے چلا چلا کر کہا کہ "وہ شام میں مسلمان بھائیوں پرہونے والے ظلم کا بدلہ لے رہا ہے" اور ساتھ ہی اس نے چاقو وار کر کے دو افراد کو زخمی کردیا تھا۔ حملہ آور نے مسلسل دھمکیاں دیں کہ اگر شام میں اسپتالوں پر بمباری کا سلسلہ بند نہ کیا گیا تو برطانیہ میں مزید انتقامی کارروائیاں کی جائیں گی۔

گذشتہ روز محی الدین میر کو لندن کی یاک مقامی عدالت میں پیش کیا گیا، جہاں پولیس نے سیکیورٹی کے فول پروف انتظامات کیے تھے۔ ملزم نے مٹیالے رنگ کا ٹریک سوٹ پہن رکھا تھا۔ عدالت میں پیشی کے دوران وہ نہ رونے کا ناٹک بھی کرتا۔ اس نے عدالت کو صرف اپنا نام اور ایڈریس ہی بتائے۔

کیس کی سماعت کرنے والے برطانوی جج نے ملزم کا نفسیاتی معائنہ کرنے کی بھی ہدایت کی ہے اور کہا ہے کہ انہیں لگتا ہے کہ ملزم نفسیاتی عوارض کا شکار ہے۔