.

المنار اور المیادین کی نشریات پر پابندی کیوں لگائی گئی؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عرب سیٹلائٹس کمیونیکیشن فاؤنڈیشن [عربسات] نے واضح کیا ہے کہ #لبنان سے نشریات پیش کرنے والے ’المنار‘ اور ’المیادین‘ ٹیلی ویژن چینلوں سیٹلائیٹس پر پابندی طے شدہ اصولوں اور قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی پر لگائی گئی ہے۔

خیال رہے کہ حال ہی میں ’’عربسات ‘ نے اپنے تمام سیٹلائیٹس کو لبنانی ٹی وی چینلوں المنار اور المیادین کی نشریات نہ دکھانے کی ہدایت کی تھی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عربسات کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ سیٹلائٹس پر نشریات پیش کرنے پر پابندی ان دونوں ٹی وی چینلوں کو تجارتی، ثقافتی قواعد وضوابط خلاف ورزی کے ساتھ ساتھ فرقہ واریت کے فروغ میں ملوث ہونےکی بناء پر لگائی گئی ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ عربسات کی پالیسی میں فرقہ واریت کی کوئی گنجائش نہیں۔ عرب ٹیلی کمیونیکشن سیٹلائیٹس فاؤنڈیشن خالصتا عرب ثقافت اور کلچر کے فروغ کے ساتھ ساتھ عرب خطے سمیت پوری دنیا کے ناظرین کے لیے غیر متنازع نشریات پیش کرنے کی پالیسی پرعمل پیرا ہے۔ عربسات کی جانب سے کسی ملک کے ٹی وی چینل کی نشریات پر کوئی قدغن نہیں لگائی جاتی اور ہرملک کی اقدار وروایات کو آگے بڑھانے کے لیے انہیں موقع دیا جاتا ہے مگر فرقہ واریت کے فروغ اور مذہبی منافرت پھیلانے کے لیے عربسات کے پلیٹ فارم کو استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

خیال رہے کہ المنار اور المیادین نامی دو ٹی وی چینل لبنان سے نشریات پیش کرتے ہیں اور دونوں کا تعلق #ایران نواز شیعہ ملیشیا #حزب_اللہ سے بتایا جاتا ہے۔