163 شامی مہاجرین کے پہلے گروپ کی کینیڈا آمد

ٹورنٹو کے ہوائی اڈے پر وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے استقبال کیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

کینیڈا کا ایک طیارہ ایک سو تریسٹھ شامی مہاجرین کو لے کر ٹورنٹو کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر پہنچ گیا ہے۔کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے بہ نفس نفیس شامی مہاجرین کے اس پہلے گروپ کا استقبال کیا ہے۔

اس موقع پر انھوں نے کہا کہ ''ہم اس دن کو ایک یادگار طور پر یاد رکھیں گے''۔وہ شامی مہاجرین کے ساتھ گھل مل گئے اور ان کی خیریت دریافت کی۔

جسٹن ٹروڈو کی حکومت اس ماہ کے اختتام تک دس ہزار شامی مہاجرین کو کینیڈا منتقل کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔شامی مہاجرین کا یہ پہلا گروپ لبنان کے دارالحکومت بیروت کے ہوائی اڈے سے کینیڈا کی فوج کے ایک ٹرانسپورٹ طیارے سے روانہ ہواتھا۔

وزیراعظم جسٹن ٹروڈو کی نئی لبرل حکومت نے اس سال کے اختتام تک پچیس ہزار شامی مہاجرین کو کینیڈا میں لانے کا اعلان کیا تھا لیکن گذشتہ ماہ اس نے لاجسٹیکل مسائل کے پیش نظر اپنے اس انتخابی وعدے پر نظرثانی کی تھی۔اس کے علاوہ پیرس میں دہشت گردی کی حملوں کے بعد بھی حکومت کو اس معاملے پر تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا کہ وہ عجلت میں فیصلے کررہی ہے اور سکیورٹی خدشات کو دور کرنے پر توجہ نہیں دے رہی ہے۔

تاہم اس کے باوجود کینیڈا کے امیگریشن کے وزیر جان میکلم نے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ حکومت 31 دسمبر تک دس ہزار مہاجرین کو ملک میں لاسکتی ہے اور باقی پندرہ ہزار کی فروری 2016ء کے اختتام تک آمد متوقع ہے۔واضح رہے کہ 2014ء کے آغاز سے اب تک کینیڈا ساڑھے ہزار شامی مہاجرین کو خوش آمدید کہہ چکا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں