سعودی عرب : ڈرائیونگ کے دوران کھانے، پینے پر 150 ریال جرمانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے ٹریفک ڈائریکٹوریٹ نے گاڑی چلانے کے دوران کوئی چیز کھانے یا مشروب پینے والے ڈرائیوروں پر ڈیڑھ سو ریال جرمانہ عاید کرنے کا اعلان کیا ہے۔

ٹریفک حکام کے مطابق ڈرائیونگ کے دوران سیل فون کے استعمال کے علاوہ کھانا یا پینا قوانین کی سنگین خلاف ورزی ہے۔اس کی وجہ سے ذہنی توجہ بٹ جاتی ہے اور ڈرائیور کا تمام دھیان گاڑی چلانے پر نہیں رہتا ہے۔ان کا کہنا ہے کہ شاہراہوں پر مہلک حادثات کے باوجود ڈرائیوروں نے اپنی اس عادتِ بد کو ترک نہیں کیا ہے۔

سعودی عرب میں کیے گئے تحقیقی مطالعات کے مطابق اگر ڈرائیور گاڑی چلاتے ہوئے ساتھ کچھ کھا پی بھی رہا ہو تو اس کی چالیس فی صد تک توجہ بٹ جاتی ہے اور ایسے لوگوں کی وجہ سے ہی سڑکوں پر حادثات کی شرح میں 80 فی صد تک اضافہ ہوا ہے۔

سعودی عرب کی نیشنل ہائی وے ٹریفک سیفٹی کی جانب سے رواں سال جاری کردہ ایک مطالعاتی رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ ڈرائیوروں کی غیر حاضر دماغی اور توجہ بٹ جانے کی وجہ سے 65 فی صد حادثات رونما ہوتے ہوتے رہ گئے تھے۔

ان اعداد وشمار سے یہ بھی ظاہر ہوتا ہے کہ ڈرائیونگ کے دوران کھانا یا پینا موبائل فون پر پیغام رسانی سے بھی زیادہ خطرناک ہے۔اس مطالعے میں کافی کو کھانے اور مشروبات میں سرفہرست خطرناک چیز قرار دیا گیا ہے۔

درایں اثناء سعودی عرب کے ٹریفک حکام نے ٹریفک خلاف ورزیوں کے ریکارڈ کے لیے نافذ بشرنظام کو معطل کردیا ہے۔محکمہ ٹریفک کے ڈائریکٹر عبداللہ بن حسن الظہرانی نے تمام متعلقہ اداروں کو بشرنظام کو روکنے کے لیے ہدایت جاری کردی ہے۔اس کے تحت برقی نظام سے ٹریفک کی خلاف ورزیوں کو ریکارڈ کیا جاتا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں