.

روس شام میں بے گناہ شہریوں کو قتل کررہا ہے: امریکا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے ایک بار پھر روس پر شام میں بے گناہ شہریوں کو ہلاک کرنے کا الزام عاید کیا ہے۔امریکی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ شام میں 30 ستمبر سے جاری روسی فوج کے فضائی حملوں میں اب تک سیکڑوں عام شہری مارے جا چکے ہیں۔ روسی فوج کے حملوں میں مارے جانے والے شہریوں کے بارے میں سامنے آنے والی رپورٹس نہایت خوفناک ہیں۔ اس حوالے سے وزیرخارجہ جان کیری اپنے دورہ ماسکو کے دوران روسی قیادت سے سخت احتجاج اور غم وغصے کا بھی کر چکے ہیں۔

امریکی وزارت خارجہ کے ترجمان مارک ٹونر نے ایک بیان میں کہا ہے کہ غیرسرکاری تنظیموں کی جانب سے جاری کردہ رپورٹس حد درجہ خوفناک ہیں۔ان رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ روسی فوج کے جنگی طیاروں کے ذریعے کیے گئے حملوں میں اسکول کے طلباء، طالبات، کم سن بچے، امدادی کارکن اور خواتین بھی جاں بحق ہوئی ہیں۔ روسی فوج صدر بشارالاسد مخالف باغیوں کے خلاف کارروائی کی آڑ میں اسپتالوں، اسکولوں اور مصروف بازاروں کو بھی نشانہ بنا رہی ہے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ حال ہی میں وزیرخارجہ جان کیری نے اپنے دورہ روس کے دوران ماسکو قیادت کے سامنے بھی شام میں بے گناہ شہریوں کی ہلاکتوں کا معاملہ اٹھایا اور بمباری میں عام شہریوں کو نشانہ بنانے سے گریز کا مطالبہ کیا۔