.

یمن: ناکہ بندی کے باعث تعز کا مرکزی اسپتال بند

عالمی ادارہ صحت کا ادویہ کی قلت پر انتباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

#یمن میں جاری لڑائی کے باعث ملک کے وسطی شہر #تعز کے سب سے بڑے اسپتال کو کئی ماہ کی ناکہ بندی کے بعد بند کردیا گیا ہے۔ دوسری جانب #عالمی_ادارہ_صحت نے یمن میں صحت کی ابتر صورت حال پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے انسانی المیہ جنم لینے کا اندیشہ ظاہر کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق کئی ماہ سے حوثیوں کی ناکہ بندی کے شکار تعز کے مرکزی اسپتال میں مریضوں اور زخمیوں کے علاج کا سلسلہ بند کردیا گیا ہے۔ اسپتال میں ادویہ ختم ہوچکی ہیں جس کے باعث مقامی آبادی کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

جیل کی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ادویہ کی عدم دستیابی کے باعث وہ مزید زخمیوں اور مریضوں کے علاج معالجے سے معذرت کرتے ہیں۔ اسپتال میں آکسیجن سمیت دیگر طبی ضروریات ختم ہوچکی ہیں جب کہ #حوثی باغیوں اور علی #عبداللہ_صالح کے وفاداروں کی جانب سے اسپتال کا محاصرہ بدستور جاری ہے۔

دوسری عالمی ادارہ صحت نے خبردار کیا ہے کہ یمن میں اسپتالوں میں طبی ضروریات پوری نہ کی گئیں اور ادویہ کی فراہمی یقینی نہ بنائی گئی مقامی آبادی کو مزید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔