.

ایران جوہری معاہدے کے مکمل نفاذ کا وقت قریب!

جان کیری ایرانی ویورپی ہم منصبوں سے ملاقات کے لئے ویانا روانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزیر خارجہ جان کیری اپنے یورپی یونین اور ایران کے ہم منصبوں سے ایران کے ساتھ عالمی طاقتوں کے تاریخی جوہری معاہدے کے اطلاق کے حوالے سے بات چیت کے لئے ویانا پہنچ رہے ہیں۔

جان کیری کی جانب سے یہ دورہ اس موقع پر کیا جارہا جب امید کی جارہی ہے کہ ویانا میں قائم جوہری توانائی سے متعلق عالمی ایجنسی [آئی اے ای اے] جلد ہی اس بات کا اعلان کرے گی کہ ایران نے معاہدے کی پاسداری کرتے ہوئے ایٹمی بم پانے کے تمام عمل ختم کردئیے ہیں۔

امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان مارک ٹونر کا کہنا ہے کہ جان کیری اس دورے کے دوران ایرانی ہم منصب جواد ظریف اور یورپی یونین کی خارجہ پولیسی کی سربراہ فیڈریکا موغیرینی سے ملاقات کریں گے تاکہ ایران کے جوہری پروگرام پر ہونے والے معاہدے کے حوالے بات کی جاسکے۔

ٹونر کا کہنا تھا کہ "جیسا کہ ہم کہہ چکے ہیں کہ تمام فریق ایکشن پلان پر عملدر آ٘مد کے لئے مسلسل پیش رفت کررہے ہیں جس سے ایران کے جوہری پروگرام کو مکمل طور پر پرامن بنانے میں مدد ملے گی۔"

عالمی طاقتوں اور امریکا کے عہدیداران نے ہفتے کے روز ایکشن پلان کے نفاذ کی تصدیق کرنے سے انکار کردیا ہے مگر ان کا ماننا ہے کہ اس پر جلد ہی عمل شروع ہوجائے گا۔